خامنہ ای اور روحانی دو لاکھ ایرانیوں کی کرونا سے ہلاکتوں کے ذمہ دار ہیں: رجوی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایرانی اپوزیشن رہ نما اور مجاھدین خلق کی سربراہ مریم رجوی نے حکومت پر کرونا ویکسین کے حصول اور اس کی خریداری سےفرار اختیار کرنے کا الزام عاید کیا ہے۔ ان کا کہنا ہےکہ سپرلیڈر آیت اللہ علی خامنہ اور صدر حسن روحانی ایران میں 1 لاکھ 92 ہزار افراد کے کرونا سے اموات کے ذمہ دار ہیں۔ ان کی غلط اور ناکام پالیسیوں کے نتیجے میں لاکھوں افراد لقمہ اجل بن گئے۔

ٹویٹر اکائونٹ پر پوسٹ ایک بیان میں مریم رجوی نے کہا کہ خامنہ اور روحانی کی غیر ذمہ دارانہ پالیسیوں، لا پرواہی اور مجرمانہ غفلت کے نتیجے میں ایران میں ایک لاکھ 92 ہزار افراد وبا کے نتیجے میں ہلاک ہوگئے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ ایرانی حکومت کا گندہ کھیل مزید انسانی جانوں کے ضیاع کا موجب بنے گا۔ مظلوم ایرانی عوام حکومت کی غلط پالیسیوں کا ابھی مزید خمیازہ بھگتیں گے۔

مریم رجوی نے کہا کہ ایرانی حکومت ایگزیکٹو کمیٹی اور خامنہ ای کے احکامات پرعمل درآمد کے انتظار میں کئی ماہ سے کرونا ویکسین کی خریداری کی رٹ لگائے ہوئے ہے مگر اس باب میں کوئی پیش رفت نہیں ہوئی ہے۔

Iran: Coronavirus

خیال رہے کہ ایرانی پارلیمنٹ میں صحت کمیٹی کے چیئرمین حسن علی شہریاری نے ایک بیان میں کہا تھا کہ ایرانی حکومت کرونا ویکسین کے حصول کے لیے فنڈنگ میں ناکام رہی ہے۔

'ایسنا' نیوز ایجنسی کو دیئے گئے ایک انٹرویو میں شہر یاری نے کہا کہ ایرانی حکومت کو ویکسین کی خریداری کے لیے جلد از جلد ضروری اقدامات اور پیسوں کا انتظام کرنا ہوگا تاکہ ہم وہ رقم بیرون ملک بھیج کر ویکسین خرید سکیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں