.

سعودی عرب کے 36 ماڈرن صنعتی شہروں میں طائف بھی شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی اتھارٹی برائے صنعتی اسٹیٹ اینڈ ٹیکنالوجی زونز "مدن" کی طرف سے جاری کردہ اعداد وشمار میں بتایا گیا ہے کہ سال 2020ء کے دوران مملکت میں 2 ہزار 975 مقامات کو صنعتی قرار دینے کی منظوری دی گئی۔ سال 2019ء میں صنعتی پرمٹ اور لائنسنسر کی تعداد 1990 تھی۔ سال 2020ء میں ان میں خاطر خواہ اضافہ ہوا۔

سعودی اتھارٹی برائے صنعتی اسٹیٹ اینڈ ٹکنالوجی زونز کے ترجمان قصی العبدالکریم نے'العربیہ ڈاٹ نیٹ' سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مُملکت میں صنعتی شہروں کی تعداد 36 تک پہنچ گئی ہے۔ ان شہروں میں طائف ایک نیا اضافہ ہے جو 11 ملین مربع میٹر پر تعمیر کیا گیا ہے۔ پہلے مرحلے چار ہزار کارخانے قائم کیے جائیں گے۔ ان میں 780 چھوٹے اور درمیانے درجے کے کارخانے ہیں۔طائف میں 6 ہزار 587 صنعتی اور سرمایہ کاری کے پرمٹ جاری کیے گئے ہیں۔ سال 2019ء میں ان کی تعداد 6 ہزار 300 تھی۔

انہوں‌ نے بتایا کہ صنعتی اتھارٹی مُملکت کے صنعتی شہروں میں سرمایہ کاری کرنے والے تاجروں کو کاروباری سرگرمیوں کی انجام دہی کے لیے ہرممکن سہولت فراہم کر رہی ہے۔ حکومت مقامی صنعت کو فروغ دینے اور مقامی پیداوار میں اضافے کے لیے کوشاں ہے۔ یہی وجہ ہے کہ پرائیویٹ سیکٹر کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

قصی عبدالکریم کا کہنا تھا کہ مملکت میں صنعتی زون کو وسعت دینے کی کوششیں ویژن 2030 کے اہداف کا حصہ ہیں۔ اس مقصد کے لیے اتھارٹی کی طرف سے 'ڈیجیٹل اسٹیمپ' کے عنوان سے ایک ایپ بھی تیار کی گئی ہے۔