.

انسانی حقوق کی پامالیوں پر یورپی یونین کی ایرانی عہدیداروں پر پابندیاں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

یورپی یونین نے ایران میں انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں میں ملوث متعدد ایرانی عہدیداروں پر سخت پابندیاں عاید کی ہیں۔

یورپی یونین کے تین سفارتکاروں نے رائیٹرز کو بتایا کہ یورپی یونین 2013 کے بعد اس طرح کے پہلے اقدام میں بدھ کے روز کچھ ایرانی افراد پر انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں پر پابندیاں عائد کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

سفارت کاروں کا کہنا تھا کہ یورپی یونین کے سفیروں سے توقع کی جاتی ہے کہ وہ ان افراد کے اثاثے منجمد کرنے اور سفری پابندی عائد کرنے پر اتفاق کریں گے۔ باقاعدہ پابندیوں‌ کے نفاذ کے بعد ملزمان کے نام آئندہ ہفتے شائع کیے جائیں گے۔

ایران متعدد بار انسانی حقوق کی پامالی کرنے کے مغرب کے الزامات کو مسترد کرتا رہا ہے۔

ایک یورپی سفارتکار نے رائیٹرز کو بتایا کہ ایرانی عہدیداروں کو انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے بارے میں جان لینا چاہئے کہ اس کا خمیازہ بھگتنا پڑے گا۔

برسلز میں العربیہ اور الحدث چینلوں کے نامہ نگار نے بتایا کہ یورپی یونین اضافی ایرانی ناموں کو بلیک لسٹ میں شامل کرے گا اور پابندیوں کا دورانیہ ایک سال کے لیے بڑھا دے گا۔