.

سعودی عرب: معذور طلبا کے لیے اشاروں کی زبان تعلیمی نصاب میں شامل

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب میں وزارت تعلیم نے نئے تعلیمی سال کی تیاری کے دوران معذور طلباء کے لیے جدید تعلیمی منصوبے اور پروگرام تیار کیے ہیں۔ یہ پروگرامات معیار ، مساوی اور جامع تعلیم کے مواقع فراہم کرے گا۔ زندگی بھر سیکھنے کے مواقع کو بڑھائے گا۔ ان کی تعلیمی ضروریات کو پورا کرے گا اور وژن 2030 کے اہداف کے حصول کے لیے ان کے سیکھنے کے نتائج کو بہتر بنائے گا۔

تعلیمی پروگراموں کے لیے وزارت تعلیم کی انڈر سیکریٹری ڈاکٹر مہا سلیمان نے کہا کہ وزارت نے معذور طلباء کی خصوصیات کے مطابق خصوصی تعلیمی مطالعہ کا منصوبہ مکمل کر لیا گیا ہے۔ نئے مضامین میں انگریزی زبان، ڈیجیٹل مہارتیں، سماجی علوم، جسمانی تعلیم، اپنے دفاع، خانگی تعلیم، مخصوص افراد کے لیے اشاروں کی زبان اور عمومی تعلیم میں تمام تعلیمی کلاسوں کے لیے پیشہ ورانہ تربیتی کلاسز اور اسکول میں قرآن کی بنیادی تعلیم شامل ہے۔

ڈاکٹر مھا سلیمان
ڈاکٹر مھا سلیمان

انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ خصوصی تعلیم اور اس کے پروگراموں میں کی گئی تبدیلی سیکھنے کے مواقع بڑھانے اور معذور طلباء کے لیے اس کے نتائج کو بہتر بنانے، سکول کے دن کے اوقات تعلیم سے فائدہ اٹھانے، ان کی تعلیم میں مثبت نتائج تک پہنچنے، مختلف تعلیمی اداروں میں ان کی کارکردگی کو بہتر بنانے میں معاون ثابت ہوگی۔