.

فیروزی ساحل رکھنے والے "سعودی عرب کے مالدیپ" کی سحر انگیز تصاویر

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے جنوبی صوبے جازان میں واقع فرسان کے جزائر سحر انگیز ماحول اور دل کش مناظر سے بھرپور ہیں۔ چند روز قبل یہ اقوام متحدہ کی ذیلی تنظیم "یونیسکو" کے پروگرام کے ضمن میں شامل ہونے والا سعودی عرب کا پہلا قدرتی مقام بن گیا۔

فرسان کے جزیرے جازان شہر کے ساحل سے تقریبا 42 كلو میٹر کی دوری پر واقع ہیں۔ اس قدرتی مقام کا کُل رقبہ 5408 مربع کلو میٹر ہے جب کہ اس میں زمینی علاقوں کا رقبہ 710 مربع کلو میٹر ہے۔

یہاں کی بے پناہ قدرتی خوب صورتی اور نیلگوں شفاف پانی کے سبب بعض لوگوں نے اسے سعودی عرب کے "جزائر مالدیپ" کا نام دیا ہے۔

یہاں کُل 84 جزیرے ہیں جن میں سے تین کو مستقل صورت میں آباد شمار کیا جاتا ہے۔ یہاں کا ماحول سفید ریت، سبز چمرنگ کے درختوں اور نیلے وسیع آسمان پر مشتمل ہے۔ علاوہ ازیں یہاں پرندے، پہاڑی ہرن سرمئی رنگ کے راج ہنس بھی پائے جاتے ہیں۔ موسم سرما میں یورپ سے پرندے ہجرت کر کے یہاں آ کر ٹھہرتے ہیں۔

اس مقام کے سمندر میں 230 سے زیادہ اقسام کی مچھلیاں موجود ہیں۔ علاوہ ازیں یہاں کئی ایسے جانور پائے جاتے ہیں جن کی نسل کو معدومیت کا خطرہ ہے۔ یہ جزائر مرجان کی 50 اقسام پر مشتمل ہے۔ یہاں کی رنگ برنگی آبی حیات انسان کا دل موہ لیتی ہے۔

سعودی فوٹوگرافر خالد زاروق کے کیمرے کی آنکھ نے اس مقام کے جزیروں کے قدرتی سحر اور فیروزی پانی کو محفوظ کیا ہے۔