سعودی معیشت

ریاض میٹرو ٹرین منصوبے کا92 فی صد کام مکمل: شاہی کمیشن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض کے "شاہی کمیشن" کے ایک ذریعے نے بتایا ہے کہ "ریاض میٹرو ٹرین" منصوبے کا تقریبا 92 فی صد کام مکمل ہو چکا ہے۔

ذرائع نے العربیہ ٹی وی کو دیے گئے بیانات میں مزید کہا کہ منصوبے پر تعمیراتی اور سول ورکس مکمل ہو چکے ہیں اور یہ منصوبہ 180 سے زائد ٹرینوں کی سپلائی اور ٹیسٹ کرنے میں کامیاب ہو گیا ہے۔

ذرائع نے بتایا کہ ٹرینوں کا آپریشن اگلے مراحل تک پہنچ چکا ہے۔ اس دوران ٹرینوں نے تمام ٹریکس پر تقریباً 20 لاکھ کلومیٹر کا سفر کیا۔

قابل ذکر ہے کہ ریاض الیکٹرک ٹرین جسے "ریاض میٹرو" کے نام سے جانا جاتا ہے۔ ریاض میٹرو ٹرین شاہ عبدالعزیز پبلک ٹرانسپورٹ پروجیکٹ کا حصہ ہے۔ یہ پروجیکٹ ٹرینوں اور بسوں پر مشتمل ہے۔ چھ بڑی میٹرو لائنیں قائم کی گئی ہیں جو دارالحکومت ریاض میں تمام سمتوں سے داخل ہوتی ہیں۔ یہ میٹرو ٹرین 85 اسٹیشنوں پر مشتمل ہے۔

منصوبے کے سلسلے میں اعداد و شمار کے مطالعے سے ظاہر ہوتا ہے کہ ریاض کی آبادی اس وقت 6 ملین سے بڑھ کر اگلے دس سالوں میں 8.5 ملین سے زیادہ ہو جائے گی۔ اس کے لیے شہرمیں نقل وحرکت کی موجودہ اور متوقع ضروریات کو پورا کرنے کے لیے مزید موثر متبادل فراہم کرنے کی ضرورت ہے۔ .

میٹرو ٹرین منصوبے کی تکمیل سے ریاض میں سڑکوں پر کاروں کے رش میں کمی آئے گی۔ منصوبے کی تکمیل سے روزانہ اڑھائی لاکھ کاروں کا بوجھ کم ہوگا اور 400,000 لیٹر فیول کے مساوی ایندھن کی بچت ہوگی۔ اس سے فضائی آلودگی میں بھی کمی آئے گی۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں