اسلامی جہاد غزہ

غزہ سے اسرائیل پر راکٹ باری جاری، آئرن ڈوم نے متعدد راکٹ مار گرائے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فلسطین کی اسلامی جہاد اور دوسرے فلسطینی عسکری گروپوں کی طرف سے کل جمعرات کی شام غزہ کی پٹی سے اسرائیلی بستیوں کی طرف کئی راکٹ فائر کیے۔ ان میں سے کئی راکٹ آئرن ڈوم نے فضا ہی میں تباہ کردیے۔

العربیہ اورالحدث کے نامہ نگار نے اطلاع دی ہے کہ عسقلان کی طرف نئے راکٹ حملے کیے گئے اور سدیروت بستی میں گھروں کوراکٹ حملوں سے نشانہ بنایا گیا۔

نامہ نگار نے اس بات کی نشاندہی کی کہ راکٹ وسطی اسرائیل کے ریشون لیزیون اور ہولون کے علاقوں تک پہنچے۔ اس کے ساتھ ساتھ غزہ کی پٹی کے اطراف کی بستیوں میں انتباہی سائرن بجتے رہتے ہیں۔

فلسطینی میڈیا کا کہنا ہے کہ القدس بریگیڈز نے اسرائیلی شہروں پر طویل فاصلے تک مار کرنے والے راکٹ داغے، جس سے عسقلان میں انتباہی سائرن بج رہے تھے۔

فلسطینی میڈیا نے مزید کہا کہ صوفہ، بری جان، اشکول، زیکیم، مکیئم اور نیگیف میں بھی سائرن بجے۔

اسلامی جہاد کے دو لیڈروں کا قتل

کل جمعرات کو اسلامی جہاد کے دو رہ نماؤں علی غالی اور احمد ابو دقہ کو اسرائیلی فضائی حملوں کا نشانہ بنا کر قتل کردیا گیا۔ اسلامی جہاد نے اپنے ان دونوں کمانڈروں کی موت کی تصدیق کی ہے۔

جمعرات کو غزہ میں فضائی حملوں میں چھ فلسطینی مارے گئے۔ غزہ کی پٹی کی وزارت صحت کے مطابق مارے جانے والوں میں اسلامی جہاد کے دو رہ نما بھی شامل ہیں، جب کہ راکٹ لگنے کے بعد وسطی اسرائیل میں ایک شخص ہلاک اور کم از کم دو زخمی ہوگئے۔

جمعرات کو اسرائیلی پولیس نے ایک بیان میں وسطی اسرائیل کے شہر رحوفوت میں راکٹ حملے میں ایک شخص ہلاک ہوا۔

اسرائیلی قابض فوج کے مطابق بدھ سے اب تک غزہ کی پٹی سے اسرائیل پر 547 راکٹ داغے جا چکے ہیں اور ان میں سے 175 کو آئرن ڈوم ڈیفنس سسٹم نے روک دیا۔

166 اہداف پر چھاپے

جمعرات کوقابض فوج نے کہا کہ اس نے غزہ کی پٹی میں 166 اہداف پر حملے کیے۔

اسرائیلی وزیر دفاع یوآو گیلنٹ نے اعلان کیا کہ انہوں نے غزہ میں اضافی کارروائیوں کے سلسلے کی تیاریوں کی ہدایت کی ہے۔ یہ ہدایت ایک ایسے میں دی گئی ہے جب دوسری طرف غزہ کی پٹی میں کشیدگی کا سلسلہ جاری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ان کی فورسز اس وقت فائرنگ کے دائرے کو بڑھانے کے لیے چوکسی برقرار رکھے ہوئے ہیں۔

اضافی کارروائیوں کا سلسلہ

انہوں نے کہا کہ تمام سکیورٹی فورسز کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ اضافی کارروائیوں کے سلسلے کی تیاری کے لیے تمام ضروری اقدامات کریں اور فائرنگ کے دائرے میں توسیع کے امکان کے لیے اعلیٰ سطح کی تیاری اور چوکسی برقرار رکھیں۔

دریں اثنا اسرائیلی چینل 12 کے مطابق مقامی ذرائع نے تصدیق کی ہے کہ اسرائیلی فوج غزہ میں اسلامی جہاد تحریک کے ٹھکانوں پر بمباری جاری رکھے ہوئے ہے۔

عبرانی اخبار‘ہارٹز’کے مطابق ایک اسرائیلی اہلکار نے کہا کہ اگر ضرورت پڑی تو تل ابیب قتل کی پالیسی ترک نہیں کرے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں