یہودی آباد کاروں کا مسجد اقصیٰ پر دھاوے، اسرائیلی فوج کے غرب اردن میں چھاپے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
1 منٹ read

آج بدھ کی صبح قابض صہیونی فوج کی فول پروف سکیورٹی میں یہودی آباد کاروں نے مسجد الاقصیٰ کے صحنوں پر دھاوا بول دیا۔

مقامی ذرائع نے خبر رساں ادارے ’وفا‘ کو بتایا کہ قابض فورسزکی فول پروف سکیورٹی میں درجنوں یہودی آباد کاروں نے بدھ کو علی الصبح مسجد اقصیٰ کے صحنوں میں دھاوا بولا اور جگہ جگہ پھیل گئے۔ اس دوران قابض فوج کی موجودگی میں آباد کاروں نے تلمودی تعلیمات کےمطابق مذہبی رسومات ادا کیں۔

قابض فوج کے گھیراؤ سے قبل فلسطینیوں کی بڑی تعداد قبلہ اول میں موجود تھی۔ انہوں نے اسرائیلی فوج کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ اس دوران اسرائیلی فوج نے مسجد اقصیٰ میں آنے والے فلسطینی نمازیوں کی شناخت پریڈ کی اور انہیں تشدد کا نشانہ بنایا۔

ادھر غرب اردن میں بدھ کے روز اسرائیلی قابض فوج نے گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں میں کم سے کم 8 فلسطینیوں کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا۔

دوسری جانب مسجد اقصیٰ کی جگہ مزعومہ ہیکل سلیمانی کے قیام کے لیے سرگرم انتہا پسند یہودی گروپوں نے جمعرات کو مسجد اقصیٰ پر اجتماعی دھاووں کی اپیل کی ہے۔

اس اپیل کے بعد بیت المقدس کی فلسطینی شخصیات اور مذہبی جماعتوں نے فلسطینیوں پر زور دیا ہے کہ وہ جمعرات کو یہودی آبادکاروں کے دھاووں کوناکام بنانے کے لیے مسجدا قصیٰ میں حاضری کو یقینی بنائیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں