سورہ، آیت نمبر، صفحہ نمبر،شان نزول، کے ساتھ قرآن کوحفظ کرنے والے ننھے حافظ سے ملیے

مسجد حرام اور مکہ مکرمہ کی زیارت پر فخر کا اظہار خادم حرمین اور ولی عہد کے لیے بیک تمناؤں کا اظہار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب کی حکومت کی سرپرستی میں ہونے والے شاہ عبدالعزیز بین الاقوامی حفظ قرآن مقابلے میں ویسے تو ہزاروں قراءاور حفاظ شرکت کر رہے ہیں مگر قرغزستان کے ننھے حافظ قرآن عبداللہ ایدوسوف تو چھا گئے ہیں۔ عبداللہ کا کمال یہ ہے کہ اس نے قرآن پاک کی تمام آیات کو سورہ، آیت نمبر اور نسخے کے صفحہ نمبر کے ساتھ یاد کرکے حفظ قرآن کی اپنی صلاحیت کا اظہار کیا ہے۔ اس کے علاوہ وہ آیات کی تفسیر کو بھی سمجھتا ہے اوران کے شان نزول، متعلقہ آیت کے صفحے کے آخری آیت، رکوع نمبر اور جس مقام پر آیت نازل ہوئی اس کا بھی بہ خوبی علم رکھتا ہے۔

قرغزستان کے دارالحکومت بشکیک سے گرینڈ پرائز جیتنے کی بڑی امیدوں کے ساتھ مکہ مکرمہ آنے والے حافظ قرآن نے بارہ سال کی عمر میں قرآن حفظ کرنا شروع کیا اور 3 سال بعد مکمل حفظ کیا۔

حافظ ایدوسوف نے کہا کہ شاہ عبدالعزیز بین الاقوامی مقابلہ برائے حفظ، تلاوت اور تفسیر قرآن کے اڑتالیسویں سیشن میں حصہ لینے کے لیے اسے دیہات کی سطح پر مقامی مقابلوں میں حصہ لینا پڑا، پھر شہروں اور پھر قومی سطح پر ان مقابلوں میں پہلی پوزیشن حاصل کی۔

اس نے کہا کہ جب اللہ تعالیٰ نے اسے قرآن پاک کو مکمل طور پر حفظ کرنے کی نعمت عطا کی تو اس نے قرآن پاک کے علوم کو سیکھنا شروع کیا ،جس میں قرآن کے نزول کے مقامات بھی شامل ہیں۔ سورتوں کی ترتیب، آیات، صفحہ، صفحہ کے شروع اور آخر کے ساتھ ساتھ سورہ کا آغاز اور اختتام۔

مقابلے میں حصہ لینے والے کم عمر قاری نے کنگ عبدالعزیز بین الاقوامی مقابلہ برائے حفظ قرآن میں حصہ لینے پر فخر کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ ہر اس شخص کا خواب ہے جو خدا کی مقدس کتاب کو حفظ کرتا ہے۔ کیونکہ یہ حرمین شریفین کی سرزمین پر منعقد کیا گیا ہے اور یہ مقابلہ مملکت سعودی عرب کے بانی کا نام پر ہے- یہ مسلمانوں کے دلوں میں ایک عظیم مقام رکھتا ہے۔ وہ مقابلے کے حتمی مراحل میں شامل ہونے کی تیاری کررہا ہے۔ اس نے کہا کہ وہ مکہ مکرمہ کے بارے میں بہت کچھ سنتا تھا، لیکن اس نے اسے نہیں دیکھا اور اس مقابلے نے اس کی خواہش پوری کر دی۔

ایدوسوف نے سعودی قیادت کا شکریہ ادا کیا، خاص طور پر حفظ قرآن کے پروگرام کی سرپرستی کرنے پرخادم حرمین شریفین شاہ سلمان بن عبدالعزیز آل سعود اور عزت مآب ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کا خصوصی شکریہ ادا کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں