سائبر سکیورٹی کے میدان میں سعودی عرب اور پاکستان مضبوط پارٹنر بن سکتے ہیں: احمد فاروق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

سعودی عرب میں پاکستان کے سفیر احمد فاروق نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ اسلام آباد اور ریاض کے درمیان سائبر سکیورٹی کے میدان میں معاہدات اور تعاون میں فروغ کے لیے مل کر آگے بڑھ سکیں گے۔

وہ سعودی عرب میں اختتام پذیر ہونے والے تیسرے سائبر سکیورٹی فورم کے اختتام پذیر ہونے کے بعد بات کر رہے تھے۔

ریاض میں یکم اور دو نومبر کو منعقد ہونے والی اس کانفرنس میں سائیبر سکیورٹی سے متعلق پاکستان کی متعدد کمپنیوں نے شرکت کی۔

کانفرنس 'چارٹنگ شئیرڈ پرائرٹیز ان سائیبر سپس' کی تھیم کے تحت چیلنجوں کو سمجھنے اور ان کے حل کے لیے تیار کیے گئے موضوعات پر ایک سو بیس ملکوں کے ایک سو پچاس مقررین اور ماہرین نے شرکت کی۔

کانفرنس کی میزبانی نیشنل سائبر سکیورٹی اتھارٹی اور سعودی انفارمیشن ٹیکنالوجی کمپنی نے مشترکہ طور پر کی۔ کانفرنس کے 35 سیشنز میں سائبر سکیورٹی سے متعلق سروسز دینے والی دنیا بھر کی کمپنیوں کے سربراہان اور سینئیر حکام نے شرکت کی۔

سفیر پاکستان احمد فاروق نے کہا ' میں خوش ہوں پاکستان کے سائبر سکیورٹی لیڈرز اور سائبر سکیورٹی پروفیشنلز نے اس اہم تقریب میں شرکت کی ہے۔ ' قوی امید ہے کہ پاکستان اور سعودی عرب کے درمیان سائبر سکیورٹی کے میدان میں مضبوط پارٹنر بن کر سامنے آئیں گے۔ '

'یہ موقع جو اس تقریب کے حوالے سے ملا ہے، یہ ایک اہم پلیٹ فارم بن کر سامنے آیا ہے۔ اس کی وجہ سے سائبر سکیورٹی کے بین الاقوامی ماہرین اور فیصلہ سازوں کو باہم قریب آنے کا موقع ملا۔ ایک دوسرے کے تجربات سے آگاہی ملی اور کہاں کس کے لیے کیا موقع ہیں ان کی نشاندہی کی جا سکی۔ '

مقبول خبریں اہم خبریں