اسرائیل کی ایک بار پھرشمالی غزہ کو خالی کرنے کی دھمکی، بمباری میں مزید اموات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

اسرائیلی قابض فوج نے غزہ کی پٹی پر جاری اپنی جارحیت کے دوران ایک بار پھر نہتے شہریوں کو شمالی غزہ سےجنوب کی طرف نکلنے کا حکم دیتے ہوئے ان کی مشکلات میں اضافہ کردیا ہے۔

یہ پیش رفت ایک ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب حماس اور اسرائیل کے درمیان جنگ بندی کے امکانات دیکھے جا رہے ہیں۔

اسرائیل کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے جنگ بندی کی کوششوں میں پیش رفت نہیں کی جا سکی ہے۔

اطلاعات کے مطابق اسرائیلی فوج نے شمالی غزہ کے علاقوں الشجاعیہ،جبالیہ اور دوسرے مقامات میں رہنے والے فلسطینیوں کو علاقہ فوری طور پر خالی کرنے کی ہدایت کی ہے۔

اسرائیلی فوج کے ترجمان اویچائی ادرعی نے "X" پر ایک ٹویٹ میں اعلان کیا کہ ان علاقوں کے رہائشیوں کو جنوبی غزہ کی وادی تک پہنچنے کے لیے مقامی وقت کے مطابق شام چار بجے تک صلاح الدین روڈ کے ساتھ سفر کرناہوگا اور انسانی بنیادوں پر اس علاقے کو سفر کے لیے کھولا گیا ہے۔

"عارضی حکمت عملی کی معطلی"

انہوں نے مزید کہا کہ خان یونس کے المنارہ اور السلام محلے کے باشندوں کے لیے مقامی وقت کے مطابق صبح 10 بجے سے دوپہر 2 بجے کے درمیان "عسکری سرگرمیوں کو عارضی طور پر روک دیا جائے گا"۔

انہوں نے دعویٰ کیا کہ حماس نے شمالی غزہ کی پٹی پر اپنا کنٹرول کھو دیا ہے۔ انہوں نے الزام لگایا کہ وہ رہائشیوں کو جنوب کی طرف جانے سے روکنے کی کوشش کر رہی ہے۔

انہوں نے رہائشیوں سے جنوبی غزہ کی پٹی میں المواصی کے مقام پر رہنے کی ہدایت کی۔

دوسری طرف القسام بریگیڈز نے اعلان کیا کہ اس نے مختصر فاصلے تک مار کرنے والے "رجوم" میزائل سسٹم کے ذریعے ہولیت میں اسرائیلی افواج کے مرکز کو نشانہ بنایا ہے۔

خان یونس میں بمباری، متعدد افراد شہید

غزہ کے شمال میں بیت لاہیا کے کمال عدوان ہسپتال میں قابض فوج کی الحوجہ اور الیفویہ گلیوں اور جبالیہ کے الطرنس جنکشن کے قریب ایک مکان پر بمباری کی جس کے نتیجے میں متعدد شہری شہید اور زخمی ہوئے۔

خان یونس کے مشرق میں واقع قصبے بنی سہیلہ میں ابوموسیٰ خاندان کے تین منزلہ مکان کو قابض فوج نے نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں 15 شہری شہید، جن میں نصف سے زائد خواتین اور بچے ہیں۔ بمباری سے مکان ملبے کا ڈھیر بن گیا جس کے نتیجے میں کئی شہری ملبے تلے دب گئے ہیں اوران کی تلاش جاری ہے۔

طیاروں نے خان یونس کے شمال مشرق میں القرا میونسپلٹی کی عمارت پر بمباری کی۔

قابض طیاروں نے وسطی غزہ کی پٹی میں نصیرات کیمپ میں ایک رہائشی اپارٹمنٹ پر بمباری کی۔

وسطی غزہ میں نصیرات کے مقام پر فوٹو جرنلسٹ محمد عیاش اپنے خاندان کے متعدد افراد سمیت متعدد شہری زخمی ہوگئے جس کے بعد اسرائیلی جارحیت میں اب تک شہید ہونے والے صحافیوں کی تعداد 65 ہو گئی ہے۔

غزہ کی پٹی میں سرکاری میڈیا آفس نے بدھ کی شام اعلان کیا کہ گذشتہ 7 اکتوبر سے پٹی پر اسرائیلی جنگ میں شہید ہونے والے فلسطینیوں کی تعداد 14,532 ہو گئی ہے، جن میں 6,000 سے زیادہ بچے اور 4,000 خواتین شامل ہیں.

مقبول خبریں اہم خبریں