متحدہ عرب امارات کا موسمیاتی تبدیلیوں کے چینلج سے نمٹنے کے لیے 30 ارب ڈالر کا اعلان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

متحدہ عرب امارات کے صدر شیخ محمد بن زاید نے اقوام متحدہ کے زیر اہتمام جاری موسمیاتی امور پر عالمی کانفرنس میں اعلان کیا ہے کہ امارات کی طرف سے موسمیاتی ضرورتوں کے لیے 30 ارب ڈالر کی فنانسگ کی جائے گی۔ موسمیاتی کانفنرس 'سی او پی 28 ' ان دنوں دبئی میں جاری ہے۔

کانفرنس میں دنیا بھر سے 200 رہنما شریک ہیں۔ ان میں کئی مملکتوں کے سربراہان، حکومتوں کے ذمہ داراور نمائندے بھی شریک ہیں۔

متحدہ عرب امارات کی طرف سے اعلان کی گئی خطیر رقم ایک نئی لانچ شدہ کیٹالیٹک وہیکل ' آلٹیرا ' کے سلسلے میں ہے۔ یہ گاڑی بین الاقوامی سطح پر موسمی تبدیلوں سے نمٹنے کے لیے کوششوں کو آگے بڑھائے گی۔ ان کوششوں کی توجہات کا ہدف دنیا کا جنوب ( گلوبل ساؤتھ) ہو گا۔

30 ارب ڈالر کی اس خطیر رقم کے ساتھ ' آلٹیرا' موسمیاتی مقاصد کے لیے دنیا کی سب سے بڑی نجی سرمایہ کاری گاڑی بن گئی ہے۔ سال 2030 تک اس کا ہدف 250 ارب ڈالر کا سرمایہ دنیا بھر میں لگانا ہے۔

اس منصوبے کے تحت موسمیاتی تبدیلیوں کے چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے سرمایہ کاری کو بڑھانا اور اس مقصد کے لیے منڈیوں کو کھڑا کرنا ہے۔ کیونکہ روایتی سرمایہ کاری کو لاحق کئی قسم کے خطرات کی وجہ سے سرمایہ کاری کمی کا شکار ہے۔

صدر امارات شیخ محمد بن زاید نے کانفرنس میں اس بڑی رقم کی فنانسگ کا اعلان کیا اور کہا مجھے اس کی بہت خوشی ہو رہی ہے۔ یہ موسمیاتی سرمایہ کاری اس خلاء کو پر کرے گئ جو نئے چیلنجوں کی وجہ سے پیدا ہو رہا ہے۔ واضح رہے 'سی او پی 28' میں اس طرح کی فنانسگ کو کانفرنس کے ایجنڈے میں کلیدی جگہ دی گئی ہے۔

کانفرنس کے صدر ڈاکٹر سلطان الجابر نے موسمیاتی مقاصد کے لیے وہیکل لانچنگ کو عالمی ضرورتوں اور اہداف کے لیے ایک فیصلہ کن مرحلہ قرار دیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں