مشرق وسطیٰ

اسرائیلی ڈرون حملے میں حزب اللہ کے ’وی آئی پی پروٹیکشن یونٹ‘ کے دو ارکان ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

لبنان کی قومی خبر رساں ایجنسی کے مطابق اسرائیلی ڈرون نے اتوار کے روز جنوبی لبنان کے ضلع بنت جبیل میں فوجی چوکی کے قریب ایک کار کو نشانہ بنایا جس میں کار کو بری طرح نقصان پہنچا۔ ایجنسی نے بتایا کہ ڈرون نے کار پر میزائل داغا جس سے کار کی تباہی کے ساتھ اس کے قریب موجود ایک اور کار کو بھی جل گئی۔

اس تناظر میں سکیورٹی ذرائع سے یہ بیان منسوب کیا جا رہا ہے کہ لبنانی حزب اللہ گروپ کے دو جنگجو آج بروز اتوار کو جنوبی لبنان میں ایک کار پر اسرائیلی ڈرون حملے میں مارے گئے ہیں۔

سکیورٹی ذرائع نے بتایا کہ اسرائیل کی سرحد کے قریب جنوبی لبنان پر تازہ ترین اسرائیلی حملے میں ہلاک ہونے والے حزب اللہ کمانڈروں کی شناخت نہیں ہو سکی۔

العربیہ اور الحدث کے ذرائع کا کہنا ہے کہ جنوبی لبنان کے علاقے کفرا میں ہلاک ہونے والے حزب اللہ کے دو ارکان ’وی آئی پی اور لیڈرز پروٹیکشن یونٹ‘ کے رکن تھے۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ کفرا پر اسرائیلی بمباری میں حزب اللہ کے ہلاک ہونے والے ایک شخص کا نام فضل سلیمان تھا۔

لبنانی حزب اللہ نے ایک بیان میں کہا ہے کہ اس کے جنگجوؤں نے لبنان کے ساتھ سرحد پر اسرائیلی برانیٹ بیرکوں پر میزائل ہتھیاروں سے بمباری کی اور اسے "براہ راست نشانہ" بنایا گیا۔

گذشتہ روز حزب اللہ نے جنوبی لبنان میں ایک کارپر اسرائیلی حملے میں علی محمد حدرج نامی قدس فورس کی فلسطین شاخ کے ایک رہنما کی ہلاکت کی تصدیق کی تھی۔

لبنان کی قومی خبر رساں ایجنسی نے اطلاع دی ہے کہ جنوبی لبنان میں ایک کار پر اسرائیلی حملے میں مرنے والوں کی تعداد دو ہو گئی ہے، جب کہ اس سے قبل اس حملے میں چار افراد کی ہلاکت کی اطلاع تھی۔

قبل ازیں ایجنسی نے اطلاع دی تھی کہ بمباری ڈرون کے ذریعے کی گئی اور البازوریہ قصبے کی سڑک پر ایک کار کو نشانہ بنایا گیا۔

خیال رہے کہ کل ہفتے کے روز شام کے دارالحکومت دمشق کی المزہ کالونی میں کیے گئے حملے میں پاسداران انقلاب کے چار سینیر کمانڈروں سمیت کم سے کم دس افراد ہلاک ہو گئے تھے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں