’الاحساء رن ریس‘ میں 12 ہزار سے زائد مرد و خواتین کی شرکت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب، خلیجی ریاستوں اور پوری دنیا کے تمام خطوں سے 12,000 سے زائد شرکاء کل اتوار کی صبح سے ہی "الاحسا رن" ریس میں حصہ لینے کے لیے جمع ہوئے۔ اس ریس کی قیادت الاحساء کے گورنر شہزادہ سعود بن طلال بن بدر کر رہے تھے۔اس ایونٹ کو الاحساء گورنری، الاحساء میونسپلٹی،سعودی اسپورٹس فار آل فیڈریشن اور الموسیٰ ہیلتھ گروپ کی تنظیم کا تعاون حاصل تھا۔

الاحساء کے گورنر نے زور دے کر کہا کہ 2024ء کے سیزن کے لیے "الاحساء رن" ریس کو کمیونٹی کے متاثر کن اقدامات میں سے ایک سمجھا جاتا ہے، کیوں کہ اس سیزن کے لیے ’’مریضوں کی مدد اور بحالی کے لیے ایک قدم ایک ہزارمیل کے برابر ہے‘‘ کا سلوگن اختیار کیا گیا تھا۔

انہوں نے کہا کہ میراتھن جیسی سرگرمیاں معیار زندگی کے پروگرام کے مقاصد کو فروغ دیتی اور معاشرے میں کھیلوں کی مشق کے کلچر کو فروغ دیتی ہیں۔ ان سے انسانی صحت پر مثبت اثرات مرتب ہوتے ہیں۔

الاحسا رن ریس

انہوں نے مزید کہا کہ اس سیزن میں مختلف عمر کے گروپوں کی وسیع شرکت دوڑ کے بارے میں اعلیٰ سطح کی آگاہی کا ثبوت ہے جو کہ ایک پائیدار ثقافت بن چکی ہے۔

6 کلومیٹر کی کیٹیگری میں 12 ہزارسے زائد امیدواروں، سرکاری اداروں کے منتظمین، نجی شعبے اور تاجروں کی بڑی تعداد نے شرکت کی، جب کہ میراتھن میں مردو کے ساتھ خواتین کو بھی شامل کیا گیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں