سلامتی کونسل میں جنگ بندی کے لیے ووٹنگ اور غزہ میں اسرائیلی بمباری

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

اسرائیلی فورسز نے منگل کے روز ایک بار پھر اس وقت غزہ میں شدید بمباری کی ہے۔ جب اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں ووٹنگ کے لیے بحث مباثے جاری تھے۔ کہ غزہ میں کس طرح جنگ بندی کر کے فلسطینیوں کو مزید ہلاکتوں اور تباہی سے بچایا جاسکے۔

اقوام متحدہ نے اسرائیلی محاصرے میں غزہ میں انسانی صورتحال پر خطرے کی گھنٹی بجاتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ خوراک کی قلت زدہ بچوں کی اموات کے 'دھماکے' جیسی صورت حال بننے کا خطرہ ہے۔

اقوام متحدہ کی طرف سے مرتب کردہ جائزوں میں بتایا گیا ہے کہ پچھلے تقریباً ساڑھے چار مہینوں کی مسلسل اسرئیلی جنگ کے باعث نے فلسطینی سرزمیں کا بیشتر حصہ تباہ ہو چکا ہے۔ تقریباً پوری آبادی بے گھری اور نقل مکانی کے علاوہ بھوک اور پیاس سے مرنے کے لیے بے یارو مدد گار پڑی ہے۔ عالمی طاقتیں اب تک اس بحران سے نکلنے کا راستہ تلاش کرنے میں ناکام ہیں۔

کی کوشش کر رہی ہیں، جس میں منگل کے بعد اقوام متحدہ کی جنگ بندی کی قرارداد کو ایک بار پھر امریکی ویٹو کا سامنا ہو سکتا ہے۔ ادھر یورپی یونین کے وزرائے خارجہ کے اجلاس کے دوران کہا گیا ہے کہ غزہ میں جاری اس جنگ میں انسانی بنیادوں پر وقفہ ہونا چاہیے۔ صرف ہنگری نے جنگ جاری رکھنے کی حمایت کی ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں