اسرائیل کو فوجی سازوسامان کی ترسیل کےاجازت نامے روکنےکےلیےکینیڈین عدالت میں مقدمہ درج

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

فلسطینیوں کے بنیادی انسانی حقوق کی خاطر آواز اٹھابے والے ایک گروپ نے کینیڈا کی حکومت کے خلاف ایک مقدمہ دائر کیا ہے کہ کینیڈین حکومت کو حکم دیا جائے کہ وہ ان کمپنیوں کو روکے جو اسرائیل کو اسلحہ ، فوجی سازو سامان اور جنگی ٹیکنالوجی منتقل کرتی ہیں۔

واضح رہے اسرائیل نے سات اکتوبر سے غزہ میں جنگ شروع کر رکھی ہے ۔ اب تک اس جنگ کے پانچ ماہ مکمل ہونے کے ساتھ ساتھ 30717 فلسطینی اسرائیلی فوج کے ہاتھوں قتل ہو چکے ہیں۔ فلسطینیوں سمیت کسی بھی عرب ملک کے خلاف یہ اسرائیل کی اب تک کی سب سے طویل جنگ ہے جو ابھی جاری ہے۔

اس دوران اوٹاوا نے اسرائیل کو 28 اعشاریہ 5 ملین کینیڈین ڈالر کے پرمٹ جاری کیے ہیں۔ ان پرمٹس کی بنیاد پر فوجی سامان برآمد کرنے والی کمپنیاں اسرائیل کوجنگی سامان بھیج سکیں گی۔ خیال رہے یہ سامان پچھلے سال اسرائیل کو برآمد کی گئے فوجی سامان سے زیادہ کی مالیت کا ہے۔

مقدمہ دائر کرنے والے گروپوں نے اپنی درخواست میں بھی ذکر کیا ہے کہ اس قدر ہلاکتوں کے بعد بھی اسرائیل کو فوجی سازو سامان دیا جارہا ہے۔ یہ مقدمہ دائر کرنےوالے گروپوں میں ' کینیڈئین لائیرز فار انٹر نیشنل ہیومن رائٹس گروپ ، فلسطینی گروپ الحق اور کئی افرادشامل ہیں۔

مقدے کے لیے دائر کردہ درخواست کے دائر ہونے کے بعد کینیڈا کے گلوبل افئیرز ڈیپارٹمنٹ نے ترجمان نے کہا ہے' برآمدی اجازت ناموں کے بارے میں ہماری پالیسی تبدیل نہیں ہوئی ہے۔ ہمارے پاس دنیا کا ایک مضبوط برآمدی کنٹرول سسٹم ہے، نیز ہم انسانی حقوق کا احترام ہمارے برآمدی قانون میں شامل کیا گیا ہے۔'

ترجمان نے مزید کہا 'کینیڈین حکومت کو اسرائیل کے لیے ہتھیاروں کی برآمد کی کوئی درخواست برائے اجازت نامہ نہیں ملی ہے۔ اس لیے اس کی منظوری بھی نہیں دی گئی۔ 7 اکتوبر کے بعد جاری کیے گئے اجازت نامے درحقیقت وہ تمام اجازت نامے ہیں جوغیر مہلک آلات کے لیے ہیں۔'

یاد رہے اس سے قبل ہالینڈ کی ایک مقامی عدالت نے گذشتہ ماہ حکومت کو حکم دیا تھا کہ وہ اسرائیل کو F-35 لڑاکا طیاروں کے پرزوں کی تمام برآمدات اس خدشے پر روک دے کہ وہ بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کے لیے استعمال ہو رہے ہیں۔

امریکہ اور کئی برے مغربی ملکوں کی طرح غزہ میں اسرائیل کی جاری جنگ نے کینیڈا کے بڑے شہروں میں بھی فلسطینیوں کے حامیوں کو حامی مظاہروں کی ایک مہم کو جن دے دیا ہے۔ گذشتہ ہفتے مظاہرین اونٹاریو میں بندوق ساز کمپنی کولٹ کینیڈا سے یہ مطالبہ کرنے کے لیے بھی کینیڈین مظاہرین جمع ہوئے تھے کہ اسرائیل کو اسلحہ نہ دیا جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں