کار پر اسرائیلی ڈرون حملے میں لبنانی حزب اللہ کا جنگجو ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

جنوبی لبنان میں کشیدگی کے ماحول کے جلو میں کل حزب اللہ اور اسرائیلی افواج کے درمیان ایک بڑی کشیدگی دیکھنے میں آئی جب ضلع صور کا البزوریہ قصبہ ایک نئے فضائی حملے سےگونج اٹھا۔

العربیہ/الحدث کے نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق آج جمعہ ایک اسرائیلی ڈرون نے البزوریا- وادی گیلو روڈ پر ایک کار کو نشانہ بنایا۔

اس حملے کے نتیجے میں حزب اللہ کے ایک رکن کی موت واقع ہوئی۔ آگ بجھانے والی ٹیموں نے مزید تفصیلات نہیں بتائیں کہ آیا اس حملے میں اور کوئی جانی نقصان ہوا ہے یا نہیں۔

قتل کا منصوبہ

کل جمعرات کو ایک خونی دن کے بعد جس میں حزب اللہ اور اس کی اتحادی امل موومنٹ کے 9 ارکان کی ہلاکت کے بعد حملوں کا تبادلہ ہوا۔

ہفتوں سے اسرائیل لبنانی سرزمین کے اندر گہرائی میں فضائی حملے کر رہا ہے، جس میں حزب اللہ کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ اسرائیل کے بڑھتے حملے ایک کھلی جنگ کے خطرات کو بڑھاوا دے رہی ہے۔

اسرائیلی فوج نے حزب اللہ اور حماس دونوں کے رہ نماؤں کو قتل کرنے کے منصوبے کے تحت جنوبی لبنان میں کاروں پر کئی حملے بھی کیے تھے۔

جبکہ لبنان میں اقوام متحدہ کی عبوری فورس (UNIFIL) نے کل جمعرات کو جنوبی لبنان میں بڑھتی ہوئی کشیدگی کو فوری طور پر روکنے کا مطالبہ کیا ہے۔

امریکی قومی سلامتی کونسل کے ترجمان جان کربی نے زور دیا کہ "سرحد پر امن بحال کرنا لبنان اور اسرائیل دونوں کے لیے اولین ترجیح ہونی چاہیے"۔

7 اکتوبر کو غزہ کی پٹی میں جنگ شروع ہونے کے بعد سے لبنان-اسرائیلی سرحد پر حماس کی اتحادی حزب اللہ اور اسرائیلی فوج کے درمیان تقریباً روزانہ بمباری ہوتی رہی ہے۔ اسرائیلی حملوں میں کم از کم 346 افراد ہلاک ہوئے، جن میں سے زیادہ تر حزب اللہ کے جنگجو بتائے جاتے ہیں۔ ان میں 68 شہری ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں