ثقافتی ورثہ کے تحفظ کے لیے العلا کمیشن کا چین کے شہرحنان کے ساتھ پارٹنرشپ معاہدہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

رائل کمیشن برائے العلا گورنری نے ثقافتی ورثہ کی انتظامیہ کے ساتھ چینی شہر "حنان" کے ثقافتی ورثہ کے تحفظ کے فریم ورک کے اندر ایک اسٹریٹجک شراکت داری پر دستخط کیے ہیں۔ یہ منظوری کمیشن کے مقاصد اور اہداف کا حصہ ہے جس کے تحت یہ سعودی ۔ چینی شراکت داری کے نیٹ ورک کو مضبوط کرنا ہے۔ شراکت داری، مشترکہ سائنسی تحقیق اور مشترکہ وسائل کو بڑھانے کے لیے آرکیالوجی اور ورثے کے تحفظ پر توجہ مرکوز کرتے ہوئے ثقافتی ورثہ، عجائب گھر، تحقیقی تعاون اور ہنر کی نشوونما، سیاحت اور دیگر ثقافتی تبادلے میں باہمی تعاون کو یقینی بنانا ہے۔

اس شراکت داری میں ٹیکنالوجی پر مبنی آثار قدیمہ کی تجربہ گاہ کا قیام، کھدائی کی سرگرمیوں کا انعقاد، آثار قدیمہ میں تحقیقی سرگرمیوں کا انعقاد، العلا اور حنان کے تاریخی مقامات کے درمیان روابط استوار کرنا، مشترکہ تبادلے، تعلیم اور ہنر کی نشوونما کے پروگرام، نمائشوں میں تعاون، آرٹ اور ثقافتی شعبوں میں تعاون، واقعات اور میوزیم ٹیکنالوجیز جیسے ورچوئل رئیلٹی اور اگمینٹڈ رئیلٹی کے شعبوں میں تعاون شامل ہے۔

العلا ایک بانی رکن

العلا نے شاہراہ ریشم کے شہروں کے لیے بین الاقوامی سیاحتی اتحاد کے ایک بانی رکن کے طور پر شمولیت اختیار کی۔ مملکت اور چین کے درمیان تعاون اور ثقافتی باہمی روابط کی حمایت کے فریم ورک کے اندر اس اتحاد کا مقصد شہروں کے درمیان طویل مدتی نتیجہ خیز تعاون اور معلومات کے تبادلے کی بنیاد رکھنا ہے۔ جو چین کے اندر اور باہر نمایاں سیاحتی، تاریخی اور ثقافتی اہمیت کے حامل ہیں۔

سیاحت کا فروغ

مختلف براعظموں کے 26 ممالک کے 58 بانی ممبر شہروں میں شامل ہو کر العلا جزیرہ نما عرب کے شمال مغرب اور رکن شہروں میں سیاحت اور پائیدار ترقی کو فروغ دینے کے لیے بین الاقوامی فورمز، وفود اور تقریبات میں شرکت کرے گا۔

مشترکہ تاریخ

العلا گورنری اور چینی شہر حنان ثقافتی ورثے کی حفاظت اپنے اہداف کے مطابق کرتے ہیں، کیونکہ یہ تہذیبوں کے سنگم کے طور پر ایک طویل تاریخ سے جڑے ہوئے ہیں۔ العلا دو لاکھ سال سے زیادہ عرصے سے متواتر تہذیبوں کا گھر رہا ہے، اور حنان چین کا تیسرا سب سے بڑا صوبہ ہے جس کی آبادی 100 ملین ہے۔ اس میں چینی تہذیب کے ماخذ پر 6 میں سے 5 آثار قدیمہ کے منصوبے شامل ہیں۔ العلا اور حنان دونوں ہی ’یونیسکو‘ کے عالمی ثقافتی ورثہ کے مقامات ہیں جن کی مشترکہ تاریخ پر ہے۔ قدیم بخور کے راستے، شاہراہ ریشم کے ساتھ 1,400 سال سے زیادہ قدیم اور قدیم سلطنتوں کے دارالحکومتوں کے طور پردونوں شہروں کی مشترکہ ثقافتی پہچان ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں