.

ریاض کو درپیش خطرات کا سخت جواب دیا جائے گا: پاکستان

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان کے وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ سعودی عرب کو درپیش سلامتی کے خطرات کا جواب پاکستان سختی سے دےگا۔ سعودی وزیر خارجہ نے نواز شریف سے فون پر یمن میں مدد کی درخواست کی تھی۔

اس سلسلے میں وزیر اعظم ہائوس میں ایک اجلاس ہوا، اجلاس میں مشیر خارجہ سرتاج عزیز، وزیر دفاع خواجہ آصف، آرمی چیف جنرل راحیل شریف اور ایئر چیف مارشل سہیل امان نے شرکت کی ۔

اجلاس میں وزیر دفاع اور وزیر اعظم کے مشیر برائے سلامتی امور کل 27 مارچ کو سعودی عرب بھجوانے کا فیصلہ کیا گیا فیصلہ کیا گیا، پاکستانی وفد سعودی عرب کے دورے کے دوران خطے کی صورتحال کا جائزہ لےگا۔ سعودی عرب جانے والے وفد میں مسلح افواج کے سینیر حکام بھی شامل ہوں گے۔

اجلاس میں وزیر اعظم نواز شریف نے کہا کہ سعودی عرب کی طرح دیگر خلیجی ممالک کی سلامتی بھی انتہائی اہمیت کی حامل ہے۔ سعودی عرب اور خلیج کے دیگر ممالک کیساتھ انتہائی قریبی تعلقات ہیں۔