.

پاک آرمی کا ہیلی کاپٹر گر کر تباہ، 12 افسر اورفوجی جاں بحق

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستان آرمی کا ایک ہیلی کاپٹر جمعرات کی شام صوبہ خیر پختونخوا کے ضلع مانسہرہ میں گر کر تباہ ہوگیا ہے۔حادثے میں پاک فوج کے پانچ میجر اور سات فوجی جوان جاں بحق ہوگئے ہیں۔

فوجی ہیلی کاپٹر کو شمال مغربی ضلع مانسہرہ کے علاقے سری کوٹ میں حادثہ پیش آیا ہے۔ایک سینیر فوجی افسر کے مطابق ہیلی کاپٹر میں بارہ افراد سوار تھے اور وہ تمام فوجی افسر اور اہلکار تھے۔ان میں ڈاکٹر اور طبی عملہ کے لوگ شامل تھے۔ان کا کہنا ہے کہ ہیلی کاپٹر کو بظاہر خراب موسم کی وجہ سے حادثہ پیش آیا ہے۔

جاں بحق ہونے والوں کے نام یہ ہیں:میجر ہمایوں (پائیلٹ) ،میجر مزمل (پائیلٹ) ،میجر ڈاکٹر شہزاد ، میجر ڈاکٹر عاطف ،میجر ڈاکٹر عثمان ،حوالدار منیر عباسی (فلائٹ ٹیکنیشن) حوالدار آصف ، نائیک عامر سعید ،نائیک مقبول ،سپاہی رحمت اللہ ،نرسنگ امان اللہ اور سپاہی وقار ۔

قبل ازیں مانسہرہ کے ضلعی پولیس افسر (ڈی پی او) نجیب الرحمان نے حادثے میں نو افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی تھی۔انھوں نے بتایا کہ امدادی ٹیمیں جائے حادثہ کی جانب روانہ کردی گئی ہیں۔ انھوں نے بتایا کہ ہیلی کاپٹر کو دوران پرواز گرنے کے بعد آگ لگ گئی تھی جس سے تمام لاشیں مسخ ہوگئی ہیں اور قابل شناخت نہیں رہی ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے ایک عہدے دار کے مطابق ہیلی کاپٹر نے راول پنڈی کے چک لالہ ائیربیس سے اڑان بھری تھی اور وہ گلگت جا رہا تھا۔اس میں ادویہ اور طبی سامان لدا ہوا تھا۔

صوبہ خیبر پختونخوا کے وزیر اطلاعات مشتاق غنی نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ہیلی کاپٹر کو دشوار گذار پہاڑی علاقے میں حادثہ پیش آیا ہے جس کی وجہ سے امدادی سرگرمیوں میں رکاوٹیں پیش آسکتی ہیں۔

وزیراعظم میاں نواز شریف نے ہیلی کاپٹر کے اس الم ناک حادثے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے اور جاں بحق فوجی افسروں اور جوانوں کے خاندانوں سے تعزیت اور گہری ہمدردی کا اظہار کیا ہے۔

قبل ازیں آج ہی پاکستان ائیرفورس کا ایک ہیلی کاپٹر چترال کے بالائی علاقے کھوٹ میں امدادی سرگرمیوں کے دوران حادثے کا شکار ہوگیا۔اس واقعے میں متعدد افراد زخمی ہوئے ہیں۔ذرائع کے مطابق ہیلی کاپٹر کے ذریعے چترال کے علاقے میں سیلاب میں گرے ہوئے افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا جارہا تھا۔