.

کیا پاکستان کی قومی اسمبلی قبل از وقت ٹوٹنے والی ہے؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

پاکستانی پارلیمنٹ کے ایوان زیرین [قومی اسمبلی] کے سپیکر ایاز صادق نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ اسمبلی مدت پوری نہیں کرے گی۔

ایک ٹی وی انٹرویو میں انھوں نے ملک کی سیاسی صورتحال کو ‘مایوس کن’ قرار دیا اور کہا کہ ایسے معاملات 2002 میں بھی نہیں دیکھے تھے۔

انھوں نے کہا مجھے لگ رہا ہے کچھ ہونے والا ہے لیکن یہ ملک کے مفاد میں نہیں۔ اللہ کرے اسمبلی مدت پوری کرے لیکن جو کچھ پچھلے دو تین مہینوں میں ہوا مجھے نہیں لگتا اسمبلی مدت پوری کرے گی۔

سپیکر ایاز صادق نے کہا کہ مایوسی گناہ ہے مگر میں پہلی بار سیاست میں ناامید ہوا ہوں۔ ان کا کہنا تھا ن کہ مجھے ایک ‘گریٹر پلان’ نظر آرہا ہے۔ ہو سکتا ہے کچھ لوگ استعفوں کی طرف بھی جائیں۔

ایاز صادق نے کہا پاکستان اس وقت دشمنوں سے گھرا ہوا ہے۔ پاکستان کو بیرونی خطرہ اندرونی خطرے سے کہیں بڑھ کر ہے۔ ہمیں متحد ہو کر مقابلہ کرنا ہو گا۔ ایک پارٹی کے علاوہ اپوزیشن کی تمام جماعتیں چاہتی ہیں کہ سسٹم نہ ٹوٹے اور حکومت مدت پوری کرے۔

ادھر دوسری جانب وفاقی وزیر خارجہ خواجہ آصف کا کہنا ہے کہ نواز شریف کے وعدے پورے کیے جا رہے ہیں اور اسمبلیاں اپنی مدت پوری کریں گی۔

لندن میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خواجہ آصف نے کہا کہ میری سپیکر قومی اسمبلی ایاز صادق سے بات نہیں ہوئی۔ پارلیمنٹ کا اپنا دباؤ ہے۔ عام انتخابات مقررہ مدت میں ہوں گے۔ نوازشریف کے وعدے پورے کیے جا رہے ہیں اوراسمبلیاں اپنی مدت پوری کریں گی۔