.

پاکستان میں ٹریفک کے دو مختلف حادثات میں 24 افراد لقمہ اجل بن گئے

پہلا حادثہ مسافر ٹرین اور مال گاڑی کی رحیم یار خان میں ٹکر جبکہ دوسرا حسن ابدال کے قریب بس الٹنے کی صورت میں پیش آیا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

جنوبی پنجاب کے ضلع رحیم یار خان کے قریب لاہور سے کوئٹہ جانے والی مسافر ٹرین اکبر ایکسپریس ٹرین مال گاڑی سے ٹکرا گئی۔ حادثے کے نتیجے میں 9 مسافر جاں بحق جبکہ متعدد زخمی ہو گئے۔

دوسری جانب جمعرات کی صبح سوات سے لاہور جانے والی بس جس میں 59 افراد سوار تھے حسن ابدال کے قریب براہمہ انٹرچینج کے قریب موٹر وے پر الٹ گئی جس کے نتیجے میں کم سے کم تیرہ افراد جاں بحق اور 34 دوسرے زخمی ہو گئے۔

ریسکیو ذرائع کا کہنا ہے کہ اکبر ایکسپریس ولہار اسٹیشن پر کھڑی ہوئی مال گاڑی سے ٹکرائی۔ حادثے کے مقام پر پولیس اور ریسکیو کا عملہ پہنچ گیا ہے جو امدادی کاموں میں مصروف ہے۔ حادثہ میں ٹرین کی متعدد بوگیاں بھی متاثر ہوئیں ہیں جبکہ ٹرین کا انجن مکمل طور تباہ ہو گیا ہے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ٹرین کی 3 سے 4 بوگیاں الٹ گئیں جبکہ 6 سے 7 بوگیوں کو شدید نقصان ہوا ہے۔ اے ایس پی صادق آباد کا کہنا ہے کہ کچھ لاشیں ٹرین میں پھنسی ہوئی ہیں۔ لاشیں نکالنے کے لیے ہائیدرو لک کٹر منگوایا جارہا ہے۔ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہسپتالوں میں ایمرجنسی نافذ کردی گئی ہے۔ سڑکیں ٹوٹی ہونے کی وجہ سے امدادی کارروائی میں مشکلات کا سامنا ہے۔

متاثرہ خاتون کا کہنا ہے کہ نماز پڑھ رہی تھی کہ ایسا لگا طوفان آ گیا، ٹرین اتنی زور سے ٹکرائی کے آنکھوں کے آگے اندھیرا چھا گیا۔ مسافر نے دعویٰ کیا ٹریک کا کانٹا نہ بدلنے کے باعث حادثہ پیش آیا۔

​ادھر دوسری جانب حسن ابدال کے قریب براہمہ انٹرچینج کے قریب سوات سے لاہور جانے والی بس موٹر وے پر الٹ گئی۔ حادثے میں 13 افراد جاں بحق اور 34 زخمی ہو گئے۔ جمعرات کی صبح سوات سے لاہور جانے والی بس جس میں 59 افراد سوار تھے حسن ابدال کے قریب براہمہ انٹرچینج کے قریب موٹر وے پر الٹ گئی۔

ریسکیو 1122 اور موٹر وے پولیس نے زخمیوں اور جاں بحق افراد کو ٹیکسلا اور حسن ابدال کے ہسپتال منتقل کر دیا۔ریسکیو حکام کے مطابق حادثہ تیزرفتاری اور بارش کے باعث سڑک پر پھسلن سے پیش آیا ۔حادثے میں بچ جانے والے مسافر کے مطابق بس حادثہ ڈرائیور کی تیز رفتاری، لاپرواہی اور مسلسل موبائل فون کے استعمال کی وجہ سے پیش آیا ہے جبکہ تھانہ واہ پولیس نے بس ڈرائیور احمد خان کو حراست میں لے لیا ہے۔ پولیس حکام واقعے کی مزید تفتیش کر رہے ہیں۔