.

بُڑھاپے میں خواتین کے صحت مند رہنے کے لیے 5 غذائیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

اگرچہ بڑھاپے کی بیماریاں اور آزادی چھن جانے کا خوف ایسے بھوت کی مانند ہیں جو بڑھتی عمر کے ساتھ بہت سی خواتین کا پیچھا کرتا ہے تاہم ماہرین نے ایسے جادوئی حل تک پہنچ جانے کی تصدیق کی ہے جو اس مرحلے کو بہت آسان بنا دیتا ہے۔

برطانوی اخبار "ڈیلی میل" کے مطابق ماہرین نے خواتین کو 5 غذائیں کھانے کی ہدایت کی ہے جو بڑھتی عمر کے ساتھ اچھی صحت سے لطف اندوز ہونے میں مددگار ثابت ہوسکتی ہیں۔

غذائی رجحانات اور نقل و حرکت کے مسائل کے درمیان تعلق کے بارے میں ہونے والی ایک طبی تحقیق کے نتائج سے محققین نے اس بات کا حوالہ دیا ہے کہ موسمی، سیب، ناشپاتی، سلاد پتہ اور اخروٹ کھانے سے خواتین بڑھتی عمر کے مراحل میں بھی حرکت کرنے اور روزانہ کی سرگرمیاں انجام دینے پر قادر ہوسکتی ہیں۔

تحقیق میں 30 برسوں کے دوران 54762 خواتین کی معلومات کا جائزہ لیا گیا۔ 1992 اور 2008 کے درمیان شریک خواتین سے ان کی ظاہری کام کاج سے متعلق سوالات پوچھے گئے۔ ان کے جوابات کی روشنی میں محققین نے واضح کیا ہے کہ پھلوں، سبزیوں کے ساتھ ساتھ شکر کے مشروبات ، نمک اور ناسیر شدہ چکنائی کی کم مقدار پر مشتمل غذائی نظام عام طور سے خواتین میں بڑھتی عمر کے ساتھ کمزوری کی شرح کو کم کرتا ہے۔

محققین کا یہ بھی کہنا ہے کہ تحقیق میں صرف خواتین کو شامل کیا گیا ہے لہذا اس کے نتائج کا ممکنہ طور پر مردوں پر اطلاق نہیں ہوتا ہے۔

سابقہ طبی تحقیقوں میں باور کرایا گیا تھا کہ ہفتے میں دو مُٹّھیوں کے برابر میوہ جات کھانے کا خواتین کی عمر میں اضافے کے حوالے سے ہفتے میں 4 گھنٹے دوڑنے جیسا اثر ہوتا ہے۔ اس کے علاوہ یہ بھی ثابت ہوچکا ہے کہ اخروٹ سے دل کے دورے اور ذیابیطس کا خطرہ کم ہوجاتا ہے۔ یہ دیگر میوہ جات کی نسبت اینٹی آکسائڈز کی زیادہ مقدار پر مشتمل ہوتا ہے اس لیے الزہائمر اور چھاتی کے سرطان کو بھی روکتا ہے۔