چائے کی 7 اقسام جو دیں بلند فشار خون سے نجات

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

آج کی دنیا میں بلند فشار خون (ہائی بلڈ پریشر) لوگوں کی ایک بڑی تعداد کی صحت کے لیے خطرہ بن چکا ہے۔ یہ بہت سے عوامل کے ساتھ نتھی ہوتا ہے۔ ان میں سگریٹ نوشی، موٹاپا، تناؤ، پرانے امراض اور نیند کا اچھی طرح پورا نہ ہونا شامل ہے۔

اگرچہ بلند فشار خون کو کنٹرول کرنے کے لیے بہت سی دوائیں موجود ہیں تاہم لوگوں کی اکثریت اس خاموش قاتل پر قابو پانے کے لیے قدرتی ذرائع استعمال کرنے کو ترجیح دیتی ہے۔

انگریزی ویب سائٹ "Organic Facts" نے چائے کی 7 اقسام کا ذکر کیا ہے جن کے ذریعے آپ اپنا بلند فشار خون نارمل سطح پر لا سکتے ہیں :

سبز چائے اینٹی آکسیڈنٹس کی وافر مقدار سے بھرپور ہونے کے سبب خون کی رگوں کو وسعت دیتی ہے۔ اس طرح فشار خون قدرتی طور پر کم ہو جاتا ہے۔

بعض طبی تحقیقوں میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ سیاہ چینی چائے اینٹی آکسیڈنٹس اور سکون آور خصوصیات کا بھرپور امتزاج ہے۔ لہذا یہ بلند فشار خون کا ایک مؤثر علاج ہے۔

بابونے کو عرصہ دراز سے سکون آور پودے کے طور پر جانا جاتا ہے۔ اس کی یہ خصوصیات بلند فشار خون کا مثالی حل بنا دیتی ہیں اس لیے کہ یہ خون کی شریانوں کو ڈھیلا کر کے ان کو پھیلاتا ہے۔

لہسن میں اینٹی آکسیڈنٹس اور حفاظتی نوعیت کے گندھک کے مرکبات کی وافر مقدار پائی جاتی ہے۔ یہ خون کی شریانوں اور رگوں کو سوزش سے بچاتے ہیں لہذا اس کے نتیجے میں فشار خون کی سطح نارمل ہو جاتی ہے اور امراض قلب اور فالج سے متاثر ہونے کا خطرہ کم ہو جاتا ہے۔

بچھوا بوٹی قدرتی طریقہ علاج میں بہت سے امراض کے واسطے استعمال کی جاتی ہے۔ اس کے پتوں کو خمیرے کی شکل دینے سے یہ چائے میں تبدیل ہو جاتی ہے جو جسم کے سکون پہنچانے اور بلند فشار خون کو کم رکنے کے لیے معروف ہے۔

یہ انوکھی چائے نہ صرف بلند فشار خون کو کم کرتی ہے بلکہ انسانی جسم میں کولیسٹرول کی سطح کو بھی کم کرتی ہے۔ اس طرح شریانوں کی سکڑاؤ اور دل کے دورے کا خطرہ کم ہو جاتا ہے۔

گل خطمی کی چائے اپنی سکون آور خصوصیات کے سبب معروف ہے۔ یہ فشارخون کم کرنے اور جسم میں تناؤ کے ہارمون پر روک لگانے میں مددگار ثابت ہوتی ہے۔ اس کے نتیجے میں دل اور خون کی شریانوں پر دباؤ بھی کم ہو جاتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں