پانچ عام غلطیاں جو پھلوں کے صحت کے فوائد کو کم کر دیتی ہیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ماہرین صحت کے مطابق مختلف قسم کے پھل کھانے سے ہاضمہ بہتر ہو سکتا ، ہائیڈریشن کو بڑھایا جا سکتا ، جلد کو چمکدار بنایا جا سکتا اور عمر میں اضافہ کیا جا سکتا ہے۔

منی کنٹرول ویب سائٹ کے مطابق تاہم پھلوں کو کھانے کے حوالے سے ان عام غلطیوں سے بچ کر صحت کے فوائد کی مکمل رینج سے لطف اندوز ہو جا سکتا ہے۔ یہ وہ عام غلطیاں ہیں جو پھر کے فوائد کو کم کردیتی ہیں۔

1. کھانے کے فوراً بعد پھل کھانا

اگرچہ میٹھی کا تصور پرکشش ہو سکتا ہے لیکن کھانے کے فوراً بعد پھل کھانا مناسب ہاضمے میں رکاوٹ بن سکتا ہے۔ پھل انزائمز اور سادہ شکروں سے مالا مال ہوتے ہیں جو معمول کی خوراک میں پائے جانے والے پروٹین اور پیچیدہ کاربوہائیڈریٹس سے مختلف ہوتے ہیں اور ہاضمی کے عمل کو متاثر کرتے ہیں۔

جب بھاری کھانے کے فوراً بعد پھل کھائے جائیں تو وہ پیٹ میں پھنس سکتے ہیں جس سے اپھارہ اور تکلیف ہوتی ہے۔ اس لیے ہاضمہ بہتر بنانے کے لیے بہتر ہے کہ خالی پیٹ پھلوں سے لطف اندوز ہوں یا کھانے کے بعد کم از کم 30 منٹ انتظار کریں۔

2. پھلوں کا رس

پھلوں کا جوس پینا آرام دہ اور پرکشش ہوسکتا ہے تاہم یہ جاننا ضروری ہے کہ ان مشروبات میں پورے پھلوں میں موجود فائبر کی کمی ہوجاتی ہے۔ پھلوں کا جوس نکالا جاتا ہے تو ان کے قدرتی ریشے اکثر خارج ہو جاتے ہیں ۔ یہ خون میں شکر کی سطح میں تیزی سے اضافے کا باعث بن سکتا ہے۔

3. ذخیرہ شدہ پھل کھانا

ریفریجریشن بلاشبہ پھلوں کی شیلف لائف کو بڑھانے کا ایک بہترین طریقہ ہے لیکن انہیں کاٹ کر فریج میں زیادہ دیر تک چھوڑنا ذائقہ اور غذائی اجزاء کی کمی کا باعث بن سکتا ہے۔ کچھ پھل جیسے کیلے ٹھنڈے درجہ حرارت پر ذخیرہ کرنے پر ذائقہ اور ساخت میں کمی کا شکار ہو سکتے ہیں۔

4. رات کو پھل کھانا

اگرچہ پھل زیادہ تر سنیکس کے مقابلے میں ایک صحت مند آپشن ہیں لیکن انہیں سونے سے پہلے کھانا بہترین خیال نہیں ہوسکتا ہے۔ پھل قدرتی شکر کا ذریعہ ہیں اور انہیں شام کے وقت کھانے سے سونے سے پہلے خون میں شکر کی سطح بڑھ سکتی ہے جو نیند میں بھی خلل ڈال سکتی ہے۔

5. پھل کھانے کے فوراً بعد پانی پینا

ہائیڈریٹ رہنا ضروری ہے لیکن جب پھل کھانے کے بعد پانی پینے کی بات آتی ہے تو وقت کا خیال رکھنا ضروری ہے۔ پھل کھانے کے فوراً بعد پانی پینا پیٹ کے تیزاب اور ہاضمے کے خامروں کو پتلا کر سکتا ہے جو کھانے کو ہضم کرنے کے لیے ضروری ہیں۔ یہ عمل انہضام کو بھی سست کر سکتا ہے اور اپھارہ کا باعث بن سکتا ہے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں