.

مدینہ منورہ کی 120 مساجد کی تعمیر نو کے لیے چار کروڑ ریال مختص

منصوبہ خادم الحرمین کے ملک بھر کی مساجد کی بحالی کے پروگرام کا ایک حصہ ہے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مدینہ منورہ میں اوقاف، دعوت و تبلیغ اور امور اسلامی کی وزارت کے خصوصی یونٹ نے شہر کی 120 عام مساجد اور جامع مساجد کی مرمت اور بحالی کے لیے چار کروڑ ڈالرز مختص کیے ہیں۔ خادم الحرمین الشریفین کی جانب سے سعودی عرب کے تمام علاقوں میں مساجد کی تعمیر نو کا ایک پروگرام جاری ہے۔ مدینہ میں مساجد کی بحالی بھی اسی پروگرام کے تحت کی جا رہی ہے۔

شعبہ مساجد کے ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر محمد امین بن خطری الطالب نے بتایا کہ مساجد کی تعمیر نو کے اس منصوبے کے بنیادی اور مرکزی کام مکمل ہو چکے ہیں۔ منصوبے کے تحت شہر کی 90 اور مضافات کی 30 مساجد و مراکز کی مرمت و بحالی کی جائے گی۔ اس ضمن میں نگرانی کی شرائط اور عمل درآمد کے حوالے سے اہم فیصلے ہو چکے ہیں۔

معاصر اخبار 'الریاض' کے مطابق یہ پروگرام مساجد کی ضروریات کو مدنظر رکھ کر تشکیل دیا گیا ہے اور اس میں ان تعمیر نو کے ان معیارات کا خاص خیال رکھا جائے گا جو فنی ماہرین نے شرائط، حالات اور مقداری جدول بناتے وقت مقرر کیے تھے۔

ڈاکٹر الطالب نے زور دیا کہ وزارت اپنے اس نئے پروگرام کے ضمن میں پہلے سے جاری ترمیمی اور تحفظ کے پروجیکٹس کو چھیڑنا نہیں چاہتی۔ انہوں نے کہا کہ نیا ساز وسامان اتنا ہی لایا جائے گا جتنا اس پروگرام میں منظور کیا گیا ہے۔ اسی طرح بہتر سے بہتر خام میٹریل کو استعمال کرتے ہوئے ہر مسجد کی ضرورت کو بہتریں انداز میں مکمل کرنے کی کوشش کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پروجیکٹ میں اہل علاقہ کے مطالبات کو بھی مدنظر رکھا جائے گا۔