.

سخت سیکیورٹی میں معزول صدر محمد مرسی کے مقدمے کی سماعت

معزولی کے بعد مرسی پہلی بار منظرِ عام پر آئیں گے

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

مصر میں فوج کے ہاتھوں معزول ہونے والے صدر محمد مرسی کے خلاف مقدمے کی سماعت طرا جیل کے نجائے پولیس اکیڈیمی میں ہو رہی ہے۔ العربیہ ٹی وی کے مطابق اس مقصد کے لیے انہیں بذریعہ ہیلی کاپٹر قاہرہ کی پولیس اکیڈمی پہنچا دیا گیا ہے۔

معزول صدر پر الزام ہے کہ چار اور پانچ دسمبر 2012 کو انہوں نے صدارتی محل کے باہر جمع مظاہرین کے خلاف ’تشدد اور قتل پر اکسایا‘۔ ان مظاہرین اور سکیورٹی فورسز کی جھڑپوں میں کم از کم 10 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

رواں سال جون میں ملک میں بڑے پیمانے پر ہونے والے مظاہروں کے بعد تین جولائی کو صدر مرسی کو عہدے سے ہٹا دیا گیا تھا اور یہ پہلا موقع ہے کہ معزولی کے بعد محمد مرسی منظرِ عام پر آ رہے ہیں۔

محمد مرسی کے علاوہ اخوان المسلمین کے 14 دیگر رہنماؤں پر مظاہرین کے قتل پر اکسانے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔

سرکاری ٹی وی کے مطابق کمرۂ عدالت میں محمد مرسی کے علاوہ اعصام العریان، محمد البلتاجی اور احمد عبدالعاطی جیسے اخوان المسلمین کے رہنما بھی موجود ہیں۔

ابتدائی طور پر یہ مقدمہ قاہرہ کی طرا جیل میں چلایا جانا تھا لیکن بظاہر مظاہروں کے خدشات کے پیشِ نظر اتوار کو رات گئے اس کا مقام تبدیل کر دیا گیا۔

محمد مرسی کے حامیوں کی جانب سے پیر کو احتجاجی مظاہروں کے اعلان کے بعد سکیورٹی فورسز کو چوکس کر دیا گیا ہے اور صورتحال کو معمول پر رکھنے کے لیے بیس ہزار اہلکار تعینات کئے گئے ہیں۔