یمن میں سعودی عرب اور یو اے ای کے دو سینیر کمانڈر شہید

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے دو سینیر کمانڈروں سمیت چار فوجی یمن میں حوثی ملیشیا کے ساتھ لڑائی میں شہید ہوگئے ہیں۔

متحدہ عرب امارات کی سرکاری خبررساں ایجنسی وام نے سوموار کو اطلاع دی ہے کہ سعودی عرب کے اعلیٰ فوجی افسر عبداللہ بن محمد السہیان اور اماراتی افسر سلطان محمد علی الکتبی یمن کے وسطی شہر تعز کے نزدیک حوثی ملیشیا کے ساتھ لڑتے ہوئے جان کی بازی ہار گئے ہیں۔

حوثی ملیشیا نے اپنے میڈیا ذریعے سے یہ خبر جاری کی ہے کہ دونوں فوجی افسروں پر بحیرہ احمر کے ساحلی علاقے میں راکٹ حملہ کیا گیا تھا۔اس حملے کی اطلاع ایسے وقت میں سامنے آئی ہے جب حوثی ملیشیا اور صدر عبد ربہ منصور ہادی کی وفادار فورسز کے درمیان آج نصف شب سے عارضی جنگ بندی ہونے والی ہے اور سوئٹزر لینڈ میں فریقین میں ملک میں قیام امن کے لیے منگل کو مذاکرات ہورہے ہیں۔

حوثی ملیشیا اور یمن کے سابق صدر علی عبداللہ صالح کی سابق جماعت جنرل پیپلز کانگریس ان مذاکرات میں شرکت کے لیے اپنے نمائندے بھیج رہی ہے۔سوئٹزر لینڈ میں مذاکرات کے آغاز سے قبل جنگ بندی ہوگی۔مئی اور جولائی میں بھی فریقین کے درمیان جنگ بندی کے اعلانات کیے گئے تھے لیکن اس کے باوجود لڑائی جاری رہی تھی اور فریقین نے ایک دوسرے پر سیز فائر کی خلاف ورزی کے الزامات عاید کیے تھے۔

واضح رہے کہ یمن میں مارچ سے سعودی عرب کی قیادت میں عرب اتحاد حوثی شیعہ باغیوں کے خلاف جنگ لڑ رہا ہے۔اس عرب اتحاد کے لڑاکا طیارے حوثی شیعہ باغیوں کے زیر قبضہ علاقوں اور ٹھکانوں پر فضائی حملے کررہے ہیں۔اس اتحاد میں شامل بعض ممالک نے اپنے زمینی دستے بھی یمن میں صدر عبد ربہ منصور ہادی کی وفادار فوج کی حمایت میں بھیجے ہوئے ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں