عراق میں بھی پاسداران انقلاب فورس تشکیل دینے کا ایرانی مطالبہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

ایران نے اپنے ہاں قائم پاسداران انقلاب کی طرز پر عراق میں بھی ایسی ہی ایک طاقت ور فورس تشکیل دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق ایرانی مجلس شوریٰ [پارلیمنٹ] کی قومی سلامتی و خارجہ پالیسی کمیٹی کے رکن اور رکن شوریٰ محمد صالح جوکار نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب کی طرح اب عراق میں بھی پاسداران انقلاب تشکیل دیا جائے۔

محمد صالح جوکار کو خود بھی پاسداران انقلاب ہی کے ایک ریٹائرڈ افسر ہیں نے اپنے ایک انٹرویو میں کہا کہ عراق میں پاسداران انقلاب کی تشکیل زیادہ مشکل کام نہیں۔ عراق کی تمام شیعہ ملیشیاؤں کو ایک دوسرے میں مدغم کرنے کے بعد انہیں پاسداران انقلاب کی شکل میں مربوط کیا جائے۔

ایک سوال کے جواب میں جوکار کا کہنا تھا کہ پاسداران انقلاب فورس کی تشکیل کا تجربہ علاقائی ممالک میں کافی کارگر ثابت ہو ہے۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ ان کا اشارہ عراق اور شام میں ایران کی فوجی مداخلت کی جانب تھا کیونکہ ایران ان دونوں ملکوں کی اپنی کٹھ پتلی حکومتوں کو مکمل طور پر سپورٹ کر رہا ہے۔

یاد رہے کہ صالح جوکار ایران کے ان 29 اہم رہ نماؤں میں شامل ہیں جنہیں یورپی یونین نے سنہ 2011ء کو انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کی پاداش میں بلیک لسٹ کردیا تھا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر کوئی دوست ملک پاسداران انقلاب کی طرز پر فورس تشکیل دینے کا ارادہ رکھتا ہو تو ہماری خدمات حاضر ہیں۔ ہم انہیں مکمل رہ نمائی اور مشاورت مہیا کریں گے۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں