.

"ٹشو پیپر "کھانے کا نسخہ تجویز کرنے والا معالج گرفتار

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

عراقی کردستان کے وزیر صحت ریکوت محمد رشید نے تصدیق کی ہے کہ متبادل طریقہ علاج کے معالج "ملا علی کلک" کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ریکوت کے مطابق ملا علی کی حراست کے احکامات وزارت صحت ، وزارت داخلہ اور متعلقہ عدالتوں کے درمیان تعاون کا نتیجہ ہیں۔ یہ کارروائی گزشتہ عرصے کے دوران مذکورہ معالج کے خلاف درج ہونے والی شکایتوں کی بنیاد پر کی گئی کیوں کہ ملا علی اپنے مریضوں کے علاج کے لیے جو کچھ کرتا ہے اس کا کسی بھی نوعیت کے طبی عمل سے کوئی واسطہ نہیں۔

یاد رہے کہ کرد مذہبی شخصیت ملا علی کلک خود کو "متبادل طریقہ علاج کا ماہر" قرار دیتا ہے جس نے کردستان میں طبی اور عوامی حلقوں میں بڑا تنازع کھڑا کر دیا ہے۔

اربیل میں ایک طبی مرکز چلانے والے ملا علی نے کئی ماہ قبل وزن کم کرنے کے واسطے ایک انوکھے اور عجیب نسخے میں خواتین کو ٹشو پیپر کھانے کی تجویز دی تھی۔ اس پر عمل کرتے ہوئے ایک خاتون نے ڈیڑھ ماہ میں روزانہ 25 ٹشو پیپر کے اوسط سے مجموعی طور پر 1104 ٹکڑے پیٹ میں اتار لیے جس کے نتیجے میں گزشتہ ہفتے خاتون کو اربیل میں فوری طور پر ہنگامی طبی امداد کے ہسپتال پہنچایا گیا۔