.

خلیفہ حفتر کا قطر پر لیبیا میں دہشت گردی کی حمایت کا الزام

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی قومی فوج کے سربراہ جنرل خلیفہ حفتر نے قطر اور بعض دوسرے ممالک پر اپنے ملک میں دہشت گرد گروپوں کی حمایت کا براہ راست الزام عاید کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ ممالک لیبیا میں انتہا پسند گروپوں اور ملیشیاؤں کی مالی معاونت کررہے ہیں۔

خلیفہ حفتر نے اتوار کی شب جاری کردہ ایک بیان میں کہا ہے کہ لیبیا میں چاڈی ، سوڈانی اور افریقی کمیونٹیوں کی بالعموم اور عرب کمیونٹیوں کی بالخصوص نگرانی کی جارہی ہے۔یہ لوگ سرحدوں پر کنٹرول میں نرمی کی وجہ سے ملک میں داخل ہوئے تھے اور علاقائی ممالک اور دہشت گردی کی حمایت کرنے والے ممالک نے ان کی مدد ومعاونت کی تھی۔

انھوں نے کسی اور ملک کا نام نہیں لیا لیکن قطر کا براہ راست نام لیا ہے اور کہا ہے کہ ان لوگوں کو قطر اور دوسرے ممالک کے علاوہ لیبیا میں موجود دہشت گرد گروہوں کی جانب سے رقوم ملتی رہی ہیں۔

انھوں نے مزید کہا ہے کہ مسلح افواج ان لوگوں کی کڑی نگرانی کررہی ہیں اور ان گماشتہ ملیشیاؤں کو سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں سخت ہزیمت اٹھانا پڑے گی۔

لیبیا کی مسلح افواج کے کمانڈر انچیف نے ملک میں غیرملکی شہریوں کے ہتھیار لے کر چلنے پر سخت پابندی عاید کردی ہے اور کہا ہے کہ جو کوئی بھی غیرملکی مسلح نظر آیا تو اس کو گرفتار کر لیا جائے گا اور پھر ایسے افراد کو اجتماعی یا انفرادی سز ا دی جائے گی۔انھوں نے وضاحت کی ہے کہ اگر کوئی لیبی شہریوں کی مدد کے لیے آیا تھا تو اس کو بھی ہتھیار بند ہونے کی صورت میں پکڑ لیا جائے گا۔