.

فرانس: پارلیمنٹ میں خواتین کی ریکارڈ تعداد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

فرانس میں پیر کے روز ہونے والے پارلیمانی انتخابات کے نتائج سے ظاہر ہوتا ہے کہ اس مرتبہ پارلیمنٹ کی رکنیت کے لیے خواتین کی ریکارڈ تعداد کو منتخب کیا گیا ہے۔ اس سے قبل صدر امانوئل ماکروں نے بھی اپنی سیاسی جماعت "On the Move" کے لیے صنفی توازن پر مبنی امیدواروں کی فہرست پیش کی تھی۔

انتخابات میں جیتنے والے 577 ارکان پارلیمنٹ میں خواتین ارکان کی تعداد 233 ہو گئی ہے۔ اس طرح یہ تعداد سابقہ انتخابات میں قائم ہونے والے ریکارڈ سے تجاوز کر گئی جب خواتین ارکان کی تعداد 155 تک پہنچ گئی تھی۔

بین الاقوامی پارلیمانی اتحاد کے مطابق اس طرح فرانس پارلیمنٹ میں خواتین کی نمائندگی سے متعلق عالمی درجہ بندی میں 64 ویں پوزیشن سے 17 ویں پوزیشن پر پہنچ گیا ہے جب کہ یورپ میں وہ برطانیہ اور جرمنی کو پیچھے چھوڑتا ہوا چھٹی پوزیشن پر آ گیا ہے۔

پیر کے روز انتخابات میں صدر امانوئل ماکروں کی جماعت On the Move نے بھاری اکثریت سے کامیابی حاصل کی۔ پارلیمنٹ کی منتخب خواتین ارکان میں 47 فی صد کا تعلق اسی جماعت سے ہے۔

فرانسیسی پارلیمنٹ میں خواتین کی نمائندگی میں بتدریج اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔ سال 2002 میں یہ شرح 12.3 فی صد تھی جب کہ حالیہ انتخابات کے بعد خواتین کی نمائندگی کی شرح 38.6 فی صد ہو گئی ہے۔

پارلیمانی انتخابات میں 92 فی صد ووٹوں کی گنتی مکمل ہونے کے بعد فرانسیسی وزارت داخلہ کی جانب سے جزوی سرکاری نتائج یہ ظاہر کرتے ہیں کہ صدر ماکروں کی جماعت اور اس کی حلیف جماعت نے پارلیمنٹ میں کم از کم 301 نشستیں حاصل کر لی ہیں۔
وزارت داخلہ کے بیان کے مطابق صدر ماکروں کی جماعت "آن دی مُوو" نے 263 اور "ڈیموکریٹک موومنٹ" نے 38 نشستیں جیت لی ہیں۔

گزشتہ روز انتخابات کے دوسرے مرحلے میں ووٹ ڈالنے والے افراد کی شرح کمزور رہی اور دوپہر کے بعد اس کا تناسب 35.5 فی صد تھا جب کہ مجموعی طور رجسٹرڈ ووٹروں کی تعداد 4.8 کروڑ ہے۔

مبصرین کے مطابق ووٹ ڈالنے والے افراد کی شرح میں نمایاں کمی کی کئی وجوہات ہیں۔ ان میں صدر ماکروں کی جماعت کی بھاری اکثریت سے کامیابی کی توقع ، فرانسیسی شہریوں کی انتخابات اور گرم موسم سے بیزاری جس نے لوگوں کی ایک بڑی تعداد کو پولنگ مراکز کا رخ کرنے کے بجائے تفریحی مقامات کو ترجیح دینے پر مجبور کر دیا۔ اس کے علاوہ یہ کہ روایتی طور پر صدارتی انتخابات کو ووٹروں کی زیادہ توجہ حاصل ہوتی ہے۔