.

قطر کے بحران پر بات چیت کے لیے اپنے نمائندے خلیج بھیجیں گے : ٹیلرسن

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹیلرسن نے کہا ہے کہ قطر کا بحران حل کرنے کے لیے امریکی کوششیں جاری رہیں گی اور اس سلسلے میں وفود کو جلد ہی خلیج بھیجا جائے گا۔ انھوں نے یہ بات امریکی محکمہ خارجہ میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

شام کے حوالے سے ٹیلرسن کا کہنا تھا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ داعش کی ہزیمت کے بعد اس ملک میں خانہ جنگی سے گریز کیا جائے گا۔

امریکی وزیر خارجہ کے مطابق ان کے ملک کا بدستور یہ موقف ہے کہ شام کی حکومت میں بشار الاسد کا کوئی مستقبل نہیں۔ انہوں نے باور کرایا کہ ایرانی جنگجوؤں کو چاہیے کہ اپنے وطن لوٹ جائیں۔

ریکس ٹیلرسن نے شمالی کوریا کے حوالے سے بتایا کہ "ہم وہاں حکومت کی تبدیلی یا اس کے سقوط کی کوشش نہیں کر رہے ، نہ جزیرہ نما کوریا کو جلد متحد کرنے کے لیے کوشاں ہیں اور نہ اپنے فوجیوں کو دونوں کوریاؤں کے درمیان سرحد پر بھیجنے کا سوچ رہے ہیں"۔

ٹیلرسن نے واضح کیا کہ ہم شمالی کوریا کے دشمن نہیں تاہم وہ ہمارے لیے ناقابل قبول خطرہ ہے جس کا جواب دینا ہم پر لازم ہے۔