.

کیا الاخوان المسلمین امریکی اداکار شان پین کوجمال خاشقجی پر فلم میں استعمال کرے گی؟

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متنازعہ امریکی اداکار شان پین ان دنوں مقتول سعودی صحافی جمال خاشقجی پر دستاویزی فلم بنانے کے لیے معلومات اکٹھی کرنے کی غرض سے ترکی میں ہیں۔

امریکی میڈیا کے بعض ذرائع کے مطابق ’’شان پین کو اکثر کمیونسٹ آمر اور الاخوان المسلمین امریکی انتظامیہ کی پالیسیوں کے خلاف ایک آلہ کار کے طور پر استعمال کرتے رہے ہیں‘‘۔

ترک روزنامے صباح کی ایک رپورٹ کے مطابق شان پین بدھ کو مقتول خاشقجی کی مبینہ سابقہ منگیتر خدیجہ چنگیز سے ملاقات کرنے والے تھے۔انھوں نے انقرہ میں ترک حکام سے بھی ملاقاتیں کی ہیں اور ان سے خاشقجی کیس کے حوالے سے معلومات حاصل کی ہیں۔

وہ آسکر ایوارڈ یافتہ اداکار ہیں۔ وہ ماضی میں کیوبا کے صدر راؤل کاسترو ،وینزویلا کے سابق سوشلسٹ صدر مرحوم ہوگو شاویز کے انٹرویو ز کرچکے ہیں۔وہ امریکا کے بعض میڈیا ذرائع کے لیے بالعموم اہم شخصیات کے انٹرویو کرتے ہیں اور اپنی دلچسپی کے موضوعات پر دستاویزی فلمیں بناتے ہیں اور ان سے کروڑوں ڈالر کما چکے ہیں۔

شان پین ماضی میں اپنے کام کے ذریعے بائیں بازو کی حکومتوں کی حمایت کرچکے ہیں اور مشرقِ اوسط کے خطے میں انھوں نے الاخوان المسلمین کی کاز کے حوالے سے دستاویزی فلموں پر کام کیا تھا۔انھوں نے فاک لینڈ کے جزائر کے تنازع پر برطانیہ کے بجائے ارجنٹینا کا ساتھ دیا تھا۔

ان کا ایران میں بھی اثرورسوخ ہے اور انھوں نے 2011ء میں ایران میں قید کیے گئے دو امریکیوں کو رہائی دلانے میں اہم کردار ادا کیا تھا۔وہ مہاجرین اور تارکینِ وطن کے حامی ہیں اور ان کے مسائل پر بھی دستاویزی فلمیں بنا چکے ہیں۔