شاہی خاندان کے نومولود کے بارے میں توہین آمیز ٹویٹ پر بی بی سی ریڈیو کا پیش کار فارغ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی نے اپنے ایک برطانوی ریڈیو پیش کار کو شاہی خاندان کے نومولود بچّے کے بارے میں توہین آمیز ٹویٹ پر ملازمت سے فارغ کردیا ہے۔ اس پیش کار نے اپنی ٹویٹ کے ساتھ کپڑوں میں ملبوس ایک چیمپنزی کی تصویر پوسٹ کردی تھی اوراس کے ساتھ یہ لکھا تھا:’’ شاہی بچّہ ( بی بی) اسپتال سے جارہا ہے‘‘۔

شہزادہ ہیری کی اہلیہ میگھن کے ہاں سوموار کو علی الصباح اس بچّے کی پیدائش ہوئی تھی۔اس کا نام آرچی رکھا گیا ہے۔وہ برطانیہ کے شاہی خاندان کی حالیہ تاریخ میں پہلا بچّہ ہے جو مخلوط نسل سے تعلق رکھتا ہے۔اس کے والد برطانوی ہیں اور والدہ امریکی ہیں۔

بی بی سی ریڈیو 5 کے براڈ کاسٹر ڈینی بیکر نے جمعرات کو ایک ٹویٹ میں اطلاع دی ہے ’’ ابھی ابھی مجھے فارغ کردیا گیا ہے‘‘۔بی بی سی نے کہا ہے کہ ’’اس پیش کار کی ٹویٹ فیصلے کی سنگین غلطی کی غماز تھی ۔ایک اسٹیشن کی حیثیت سے ہم جن اقدار کے علمبردار ہیں، یہ ان کے منافی ہے‘‘۔

بی بی سی نے مزید کہا ہے کہ ’’ ڈینی ایک ذہین براڈ کاسٹر ہیں لیکن وہ ہمارے ساتھ اب اپنا ہفتہ وار شو نہیں کریں گے‘‘۔

واضح رہے کہ میگھن کی والدہ افریقی نژاد امریکی شہری ہیں اور ان کے والد سفید فام ہیں۔ وہ ماضی میں بھی سوشل میڈیا پر نسل پرستانہ حملوں اور تبصروں کا ہدف بنتی رہی ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں