.

ہالینڈ کی عدالت نے داعشی جنگجوئوں کے بچوں کی واپسی مسترد کردی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ہالینڈ کی ایک اپیل عدالت نے ماتحت عدالت کے اس فیصلے کو مسترد کر دیا کہ حکومت کو ان بچوں کو واپس کرنے کی کوشش کرنی چاہیئے جن کی مائیں شدت پسند گروہوں میں شامل ہونے کے لیے شام چلی گئی تھیں۔

جُمعہ کے روز جاری کردہ عدالتی فیصلے کے خلاف حکومت کو اپیل کا حق ہے۔عدالت اپنے فیصلے کی وجوہات آئندہ ماہ جاری کرے گی۔

وزیر انصاف فریڈ گرہارس نے اس فیصلے کا خیر مقدم کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ گر خواتین ان کے ملک سے 'داعش' میں شامل ہونے کے لیے گئی تھیں انہیں اب واپس نہیں لانا چاہیے۔ عدالت نے حکومت کے فیصلے کی تائید کی ہے اور ہم اس کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ان خواتین نے اپنے بچوں کے ساتھ یا بچوں کے بغیر 'داعش' کے علاقے میں سفر کرنے اور دہشت گرد تنظیم میں شامل ہونے کا انتخاب کیا ہے۔ حکومت انہیں اس علاقے سے واپس نہیں کرے گی۔

خیال رہے کہ وکلاء نے ہالینڈ کی 23 خواتین اور ان کے 56 بچوں کی ملک میں واپسی کا مطالبہ کیا تھا تاہم حکومت نے داعش میں شمولیت کی غرض سے شام کا سفر کرنے والی خواتین اور ان کے بچوں کو واپس نہ لانے کا عزم کیا ہے۔