.

لیبی فوج کے حملے میں جنوبی طرابلس میں ترکی کی بکتر بند گاڑی تباہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لیبیا کی نیشنل آرمی نے دارالحکومت طرابلس کے جنوب میں ایک کارروائی کے دوران ترکی کی ایک بکتر بند گاڑی کو تباہ کردیا۔

العربیہ ڈاٹ نیٹ کے مطابق نیشنل آرمی کے آپریشن کنٹرول روم کے مرکزاطلاعات کی طرف سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ فضائیہ نے طرابلس ہوائی اڈے کی قریب قومی وفاق حکومت اور اس کی وفادار ملیشیا کے متعدد ٹھکانوں کو تباہ کردیا۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ لیبی فوج کی فضائی کارروائی میں ترکی کی ایک فوجی بکتر بند گاڑی تباہ کردی گئی۔

قبل ازیں سوموار کے روز جنوبی طرابلس میں قومی وفاق حکومت اور فوج کے درمیان بھاری ہتھیاروں سے لڑائی کی اطلاعات آئی تھیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نیشنل آرمی نے سرت شہرپر فیصلہ کن حملے کے لیے فوجی کمک اکٹھی کرنا شروع کردی ہے۔

لیبی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ مصراتہ میں موجود قومی وفاق ملیشیا کو شہرچھوڑنے کے لیے دی گئی تین دن کی مہلت میں توسیع نہیں کی جائے گی۔ فوج کا کہنا ہے کہ لیبیا پر ترکی جارحیت کا مقابلہ کرنے کی پوری صلاحیت ہے۔

ادھر لیبی فوج کے ترجمان میجر جنرل احمد المسماری نے کہا ہےکہ مشرقی ترھونہ پر قومی وفاق ملیشیا کےحملے کو پسپا کردیا گیا ہے۔

المسماری کا کہنا تھا کہ قومی وفاق حکومت کی وفادار ملیشیا نے ترھونہ میں حملہ کیا جس پر جوابی کارروائی کی گئی۔ جوابی کارروائی میں قومی وفاق ملیشیا کو بھاری جانی اور مالی نقصان اٹھانا پڑا ہے۔ قومی وفاق ملیشیا کی طرف سے یہ حملہ مصراتہ میں کیے گئے ایک حملے کے جواب میں کیا گیا تاہم اس حملے کو پسپا کردیا گیا ہے۔