.

کرونا سے 90 فی صد ہلاکتیں چین، اٹلی اور ایران میں ہوئیں

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

ہفتے کے روز سرکاری اعداد و شمار پر مبنی رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ اب تک کرونا کے باعث 12 ہزار افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ ہلاکتوں میں 90 فی صد تعداد چین، اٹلی اور ایران سے تعلق رکھتی ہے۔

یہ رپورٹ برطانوی خبر رساں ادارے 'اے ایف پی' کی جانب سے کل ہفتے کے روز جاری کی گئی تھی۔

'اے ایف پی' کی رپورٹ کے مطابق ہفتے کی شام تک کرونا کے باعث پوری دنیا میں 12 ہزار 592 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔ان میں سے 7 ہزار 199 یورپ اور 3459 ایشیا سے تعلق رکھتے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق اٹلی میں 4،825 افراد کی اموات کے ساتھ ہی اٹلی سب سے زیادہ متاثرہ ملک ہے۔ اس کے بعد چین میں 3255 اورایران 1556 اموات ہوئی ہیں۔

ہفتے کے روز اٹلی میں ایک دن میں غیر معمولی تعداد میں ہلاکتیں ہوئیں جہاں کم سے کم 800 افراد ہلاک ہوگئے۔ قبل زیں جمعہ کے روز اٹلی میں کرنا سے 627 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔

چین میں قومی صحت کمیشن نے ہفتے کے روز اعلان کیا کہ جمعہ کے روز چینی سرزمین پر کورونا کے 41 نئے کیسز کی تصدیق کی گئی ہے۔ انھوں نے بتایا کہ تمام افراد بیرون ملک سے آنے والے لوگوں کی وجہ سے بیمار ہوئے ہیں۔

چین کو بیرون ملک سے لگنے والے انفیکشن سے 269 افراد ہلاک ہوچکے ہیں۔

بتایا جاتا ہے کہ کرونا کے متاثرین میں میں سے بیشتر کا تعلق بیجنگ سے ہے۔ گذشتہ روزبیجنگ میں 14 نئے کیس سامنے آئے جب کہ شنگھائی میں چھ کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔

چینی ہیلتھ کمیشن کا کہنا ہے کہ ملک میں اب تک 81 ہزار 800 افراد کرونا کا شکار ہوچکے ہیں۔

چین میں جمعہ کے آخر تک 'کوویڈ ۔19' وائرس سے پھیلنے والی اموات کی تعداد 3،255 تک پہنچ گئی۔ گذشتہ روز کے مقابلے میں سات اموات میں اضافہ ہوا۔ یہ تمام ہلاکتیں کرونا کے گڑھ صوبہ وہان میں ہوئیں۔

ادھر کل ہفتےکو ایران میں کرونا کے نتیجے میں 123 نئی اموات ریکارڈ کی گئیں۔ ایران کے سرکاری ڈیٹا کے مطابق اموات کی تعداد 1556 ہوگئی۔ وزارت صحت کے ترجمان کیانوش جہاں پور کے مطابق گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 966 نئے کیسز کی تصدیق ہوگئی ہے جس کے بعد ایران میں کرونا متاثرین کی تعداد 20 ہزار 260 ہوگئی ہے۔