یمن:ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے القاعدہ کے 43 قیدی رہا کر دیے

چھوڑے گئے قیدیوں کو عدن میں جنوبی عبوری کونسل کی فورسز پر حملوں کی ہدایت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

یمن میں ایران کی حمایت یافتہ حوثی ملیشیا نے القاعدہ کے 43 قیدیوں کو جیلوں سے رہا کردیا ہے تاکہ انھیں جنوبی یمن کی قیادت کے خلاف دہشت گردی کی کارروائیوں کے لیے استعمال کیا جاسکے۔

جریدے المشہد الخلیجی نے جمعرات کو ایک رپورٹ میں یمن میں القاعدہ کے ان قیدیوں کی رہائی کی اطلاع دی ہے اور کہا ہے کہ حوثی ملیشیا نے انھیں یمن کے جنوبی شہر عدن میں جنوبی عبوری کونسل کی فورسز کے خلاف دہشت گردی کے حملوں کی ہدایت کی ہے۔

حوثی ملیشیا کے زیر انتظام جیلوں سے رہا کیے گئے ان قیدیوں سے کہا گیا ہے کہ وہ مقامی شخصیات پر خودکش اور قاتلانہ حملے کریں۔

اس جریدے نے بے نامی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ القاعدہ کے لیڈروں نے صنعاء میں حال ہی میں حوثی ملیشیا کی قیادت سے ملاقات کی تھی اور اس میں ان قیدیوں کی رہائی کا معاملہ طے پایا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں