.

شاہ عبدالعزیز لائبریری میں مسئلہ فلسطین سے متعلق منفرد تحقیقی کتب خانہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے دارالحکومت ریاض میں شاہ عبدالعزیز لائبریری نے مسئلہ فلسطین اور بیت المقدس اور اس کے مقدس مقامات کے بارے میں تحقیق کے لیے ایک منفرد کتب خانے کی تشکیل پر کام کیا ہے۔ یہ کتب خانہ ہزاروں کتابوں پر مشتمل ہے۔ ان کتابوں میں فلسطین کا مختلف تاریخی، اقتصادی، سماجی، جغرافیائی، مذہبی اور ثقافتی زاویوں سے جائزہ لیا گیا ہے۔

اسی طرح کتب خانے میں عالمی زبانوں میں نادر نوعیت کی کتابوں کا مجموعہ بھی شامل ہے۔ یہ بات سعودی سرکاری خبر رساں ایجنسی (ایس پی اے) کی ایک رپورٹ میں بتائی گئی ہے۔

عرب ورثہ اور اسلامی مقامات مقدسہ مذکورہ کتب خانے کا ایک بنیادی عنصر ہے۔ فلسطین کے حوالے سے اس میں کتابوں، دستاویزات اور نقشوں کا ایک بڑا پلیٹ فارم موجود ہے۔ اسی طرح مسجد اقصی کے حوالے سے کتب خانے نے ایک ضخیم تصویری کتاب شائع کی ہے۔ اس میں تمام مقدس مقامات، تاریخی مقامات، قبّۃ الصخرہ کی مسجد اور مسجد اقصی کے بارے میں بتایا گیا ہے۔ اس میں "الاقصی" کے عنوان سے 360 سے زیادہ تصاویر کے ذریعے مسجد اقصی کے ہر ہر حصے کی تفصیلات شامل کی گئی ہیں۔

مذکورہ کتب خانے اور فلسطینی امداد کے لیے سرگرم ایجنسی اونروا کے درمیان تعاون سے اونروا لائبریری نیٹ ورک متعارف کرایا گیا ہے۔ یہاں کنگ عبدالعزیز لائبریری نے ہزاروں کتابوں کی معلومات، آگاہی اور جان کاری فراہم کی ہے۔

کتب خانے میں شامل نادر و نایاب کتابوں میں جو مسئلہ فلسطین کے حوالے سے اہم اور نمایاں ترین مصادر و مراجع کی حیثیت رکھتی ہیں، ان میں سی آر کنڈر کی تالیف "القدس سٹی" شامل ہے۔ یہ کتاب 334 صفحات پر مشتمل ہے اور 1909ء میں لندن میں شائع ہوئی۔ کتاب میں مؤلف نے درجنوں کتابوں میں موجود تاریخی اور آثاریاتی تحقیقی مطالعوں کا خلاصہ پیش کیا ہے۔ یہ تحقیقی مطالعے چار ہزار برسوں کے دوران بیت المقدس شہر کی تاریخ اور آثار قدیمہ کی عمارتوں سے متعلق ہیں۔

کتب خانے میں انگریزی زبان میں بیت المقدس شہر کے بارے میں شائع ہونے والی پہلی کتاب "پِکٹوریل یروشلم" بھی رکھی گئی ہے۔ لیز جے روبنسن کی 163 صفحات کی یہ کتاب 1893ء میں لندن میں شائع ہوئی تھی۔

اسی طرح کتب خانے میں ولیم فرانسس لِچ کی کتاب "دریائے اردن اور بحر مُردار کے حوالے سے امریکا کی مہم" بھی شامل ہے۔ کتاب 503 صفحات پر مشتمل ہے اور یہ لندن میں 1849ء میں شائع ہوئی۔ کتاب میں مؤلف نے بحر مردار میں پہلی مرتبہ کامیاب سفر کے حوالے سے تفصیلات شامل کی ہیں۔

جے اے فرینکلن کی کتاب "فلسطين : ایک تصویری وصف" فلسطین کا ایک "پینورامک عکس" پیش کرتی ہے۔ یہ کتاب 219 صفحات پر مشتمل ہے اور 1911ء میں شائع ہوئی۔ کتاب میں 376 تصاویر ہیں۔ یہ تصاویر مؤلف نے بیت المقدس میں اپنے قیام کے دوران لیں۔

علاوہ ازیں جان ٹیلی تھون کی کتاب "فلسطين : اس کے مقدس مقامات" بھی کتب خانے میں رکھی گئی ہے۔ سال 1880ء میں لندن میں شائع ہونے والی یہ کتاب 428 صفحات پر مشتمل ہے۔ کتاب میں 350 تصاویر شامل ہیں۔ اس میں فلسطین کے جغرافیا کو اس کی مقدس تاریخ کے ساتھ مربوط کیا گیا ہے۔ یہ فلسطین کی تاریخ اور جغرافیا کے درمیان بہترین امتزاج ہے۔ کتاب میں فلسطین کی تاریخ سے مربوط شخصیات، نامور افراد، مقامات، اقوام اور واقعات سے متعلق 120 تصاویر ہیں۔