.

سعودی عرب کے ابھاائیرپورٹ پر حوثیوں کے حملے سے طیارے میں آگ لگ گئی:عرب اتحاد

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب کے جنوب مغربی شہر ابھا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر ایران کے حمایت یافتہ یمنی حوثیوں کے حملے سے ایک طیارے میں آگ لگ گئی ہے۔

عرب اتحاد نے بدھ کو حوثیوں کے دہشت گردی کے اس حملے کی تصدیق کی ہے اور کہا ہے کہ سویلین طیارے کو لگنے والی آگ پر قابو پا لیا گیا ہے۔

عرب اتحاد نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’’ابھا کے بین الاقوامی ہوائی اڈے کو نشانہ بنانے کی کوشش اور شہری مسافروں کے جان ومال کو خطرے میں ڈالنا ایک جنگی جرم ہے۔‘‘

اس نے مزید کہا ہے کہ ’’ہم شہریوں کے تحفظ کے لیے تمام ضروری اقدامات کررہے ہیں۔‘‘

قبل ازیں عرب اتحاد نے ایک اور بیان میں بتایا تھا کہ اس نے یمن سے سعودی عرب کی جانب چھوڑے گئے حوثیوں کے دو مسلح ڈرونز کو تباہ کردیا ہے۔اتحاد کا کہنا ہے کہ ’’حوثیوں نے بین الاقوامی انسانی قانون کی خلاف ورزیاں جاری رکھی ہوئی ہیں اور وہ سعودی عرب میں شہری اہداف کو جان بوجھ کر نشانہ بنانے کی کوشش کررہے ہیں۔‘‘

ایران کے حمایت یافتہ حوثیوں نے اس ہفتے میں سعودی عرب کی جانب ایک مرتبہ پھر ڈرون اور بیلسٹک میزائلوں سے حملے تیزکردیے ہیں۔سعودی وزیر خارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان نے گذشتہ سوموار کو قاہرہ میں عرب لیگ کے ہنگامی اجلاس میں اس جانب اشارہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ایران کی حمایت یافتہ ملیشیائیں عرب ممالک کی سلامتی اور استحکام کے لیے خطرے کا موجب بنی ہوئی ہیں۔