.

سعودی عرب میں دواخانوں پرکووڈِ-19 کی ویکسین مفت مہیا کی جائے گی:وزیرصحت

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

سعودی عرب بھر میں دواخانوں (فارمیسیوں) میں کرونا وائرس کی ویکسین مفت مہیا کی جارہی ہے تاکہ ویکسین لگانے کی مہم میں تیزی لائی جاسکے۔

سعودی وزیر صحت ڈاکٹر توفیق الربیعہ نے بدھ کے روز العربیہ کو ایک خصوصی انٹرویو میں بتایا ہے کہ شہریوں کی ویکسین تک رسائی آسان بنانے اور ویکسی نیشن کی مہم کو مربوط بنانے کے لیے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔

انھوں نے بتایا کہ 17 دسمبر کو ویکسین لگانے کی مہم کے آغاز کے بعد سے سعودی عرب بھر میں 100 ویکسین مراکز کھولے جاچکے ہیں جہاں اہل افراد کو مفت ویکسین لگائی جارہی ہے۔

سعودی پریس ایجنسی نے گذشتہ ہفتے یہ اطلاع دی تھی کہ اس مہم کے حصے کے طور پر بعض جامعات میں بھی ویکسین لگانے کے مراکز قائم کیے جارہے ہیں۔وہاں جامعات کے فیکلٹی ارکان اور ان کے خاندانوں کے افراد کے علاوہ عام لوگوں کے لیےکووِڈ-19 کی ویکسین دستیاب ہوگی۔

تاہم سعودی عرب میں وزارت صحت کے منظورشدہ الیکٹرانک نظام کے مطابق ترجیحی عمر کے گروپوں کو پہلے ویکسین لگائی جارہی ہے۔

ویکسین لگوانے کے خواہاں سعودی شہریوں کے پاس کارآمد قومی شناختی کارڈ اور تارکین وطن کے پاس کارآمد اقامے ہونے چاہییں۔ایسے اہل افراد وزارتِ صحت کی صحتی ایپ پر اپنے ناموں کا اندراج کراسکتے ہیں۔

وزارت صحت نے ویکسین لگوانے کے اہل تمام افراد کو ہدایت کی ہے کہ وہ کوئی ایک ویکسین لگوانے کے لیے اپنے ناموں کا اندراج ضرورکریں۔اس نے مزید واضح کیا ہے کہ مملکت میں استعمال کی جانے والی ویکسینوں کو اب تک کوئی ضمنی اثرات سامنے نہیں آئے ہیں۔

سعودی عرب میں کووِڈ-19 کی ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوانے والوں کو آن لائن صحت پاسپورٹ جاری کیا جارہا ہے۔یہ صحت پاسپورٹ وزارت صحت کی توکلنا ایپ پر دستیاب ہے۔کووِڈ-19 کی ویکسین کی دوسری خوراک لگوانے والے شخص کو چند سیکنڈز ہی میں توکلنا ایپ پرخودکار طریقے سے صحت پاسپورٹ جاری ہوجاتا ہے۔

سعودی عرب دنیا کا پہلا ملک ہے جہاں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کاوشوں کے حصے کے طور پر’’صحت پاسپورٹ‘‘ جاری کیے جارہے ہیں۔اس سے حکام کو ویکسین لگوانے والے افراد کی شناخت میں مدد ملے گی۔

سعودی عرب نے اب تک کرونا وائرس کے 378002 کیسوں کی اطلاع دی ہے۔ان میں 6505 مریض وفات پاچکے ہیں۔