.

سانسیں روک دینے والا منظر ، دو بچے یقینی موت سے محفوظ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

امریکا میں دو بچے عجوبہ طور پر موت سے اس وقت بچ گئے جب ایک مسلح شخص کسی دوسرے آدمی پر فائرنگ کرنے کے واسطے ان دونوں بچوں کے سر پر کھڑا ہو گیا۔ یہ واقعہ نیویارک شہر کے علاقے برونکس میں پیش آیا۔ واقعے کو سیکورٹی کیمرے کی آنکھ نے محفوظ کر لیا۔

تعجب خیز بات یہ ہے کہ 10 سالہ لڑکی اور اس کے 5 سالہ بھائی کے گرد کئی گولیاں گریں تاہم وہ دونوں مکمل طور پر محفوظ رہے۔

جمعے کے روز پولیس کی جانب سے جاری وڈیو ٹیپ میں سیاہ لباس میں ملبوس ایک مسلح شخص کو برونکس کی ایک سڑک پر اپنے شکار کا پیچھا کرتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

انگریزی اخبار "ڈیلی نیوز" نے جائے وقوع پر ایک عمارت میں طویل عرصے (30 برس) سے مقیم 53 سالہ جونی کے حوالے سے بتایا کہ "مسلح شخص کا ساتھی اسکوٹر پر انتظار کرتا رہا جب کہ مسلح شخص نے اپنے 24 سالہ ہدف (حسن رائٹ) کا تعاقب کرتے ہئوے اس پر گولیاں چلائیں۔ موٹر سائیکل سوار چیخ کر کہہ رہا تھا کہ 'اسے قتل کر دو ، اسے قتل کر دو'۔

حسن نے فٹ پاتھ پر بھاگ کر اپنی جان بچانے کی کوشش کی جب کہ اس ہنگامہ آرائی کے دوران میں وہاں پیدل چلنے والے لوگ بھاگ کر محفوظ جگہ تلاش کرنے لگے۔

جونی کے مطابق حسن بھاگتا ہوا فٹ پاتھ پر دو بچوں سے ٹکرا گیا۔ اس کے نتیجے میں وہ تینوں زمین پر گر گئے۔ مسلح شخص نے دونوں بچوں کی جانوں کی پروا کیے بغیر حسن پر کم از کم چھ فائر کیے۔

وڈیو سے ظاہر ہو رہا ہے کہ فائر کے وقت یہ بچے گولیوں سے محض چند انچوں کے فاصلے پر تھے۔

حسن پنڈلی میں گولیاں لگنے سے زخمی ہو گیا۔ اسے قریبی ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ اب اس کی حالت بہتر ہے۔