.

لبنان کے لیے عراقی ایندھن کی پہلی کھیپ آئندہ چند گھنٹوں میں پہنچے گی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

لبنان میں عوام کو دو ماہ سے زیادہ عرصے سے ایندھن کے سنگین بحران کا سامنا ہے۔ اس بحران نے بجلی کے سیکٹر کو شدید متاثر کیا ہے اور اب روزانہ محض چند گھنٹوں کے لیے بجلی فراہم ہو رہی ہے۔

لبنان کے حکام عراق کی جانب سے تیل کی پہلی کھیپ وصول کرنے کی تیاری میں ہیں۔ عراق اور لبنان کے درمیان رواں سال جولائی میں دستخط کیے جانے والے ایک سرکاری معاہدے کے تحت بغداد حکومت مجموعی طور پر دس لاکھ ٹن 'ہیوی فیول آئل' فراہم کرے گی۔

اس سلسلے میں 84 ہزار ٹن 'ہیوی فیول آئل' پر مشتمل پہلی کھیپ آئندہ چند گھنٹوں میں لبنان پہنچے گی۔ عراق کی تیل کمپنی State Organization for Marketing of Oil (سومو) کے ڈائریکٹر ریلیشنز اینڈ میڈیا حیدر الکعبی کے مطابق مذکورہ ایندھن کی فراہمی کا مقصد لبنان میں بجلی پیدا کرنے والے یونٹوں کی ضرورت کو پورا کرنا ہے۔ العربیہ ڈاٹ نیٹ سے گفتگو کرتے ہوئے الکعبی نے کہا کہ ہر کھیپ کی ادائیگی ایک سال کے بعد نقد صورت میں ہو گی۔

عراق اور لبنان کے درمیان مذکورہ معاہدے میں یہ بات بھی شامل ہے کہ چوں کہ عراق سے آنے والا ایندھن لبنان کے پاور پلانٹس میں براہ راست استعمال کے لیے مناسب نہیں لہذا دبئی میں امارات نیشنل پٹرولیم کمپنی اس کے مقابل دوسری نوعیت کا ایندھن فراہم کرے گی۔