سعودی عرب اورایمازون کے درمیان چھوٹے اور درمیانے کاروباروں کے فروغ کا سمجھوتا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

سعودی عرب نے دنیا کی بڑی ٹیکنالوجی اورای کامرس کمپنی ایمازون کے ساتھ ایک سمجھوتے پردست خط کیے ہیں۔اس کے تحت مملکت بھر میں چھوٹے اور درمیانے درجے کے کاروباروں(ایس ایم ایز)کوترقی اور فروغ دیا جائے گا۔

سعودی پریس ایجنسی کی رپورٹ کے مطابق اس سمجھوتے کے تحت مملکت کی وزارت سرمایہ کاری (ایم آئی ایس اے) ایک مشترکہ کمیٹی تشکیل دے گی جو’’مہارتوں، ٹیکنالوجی اور بنیادی ڈھانچے کی ترقی، آن لائن خریداری اور رقوم کی برقی منتقلی کے عمل میں علم اور اعتماد کی معاونت‘‘پرتوجہ مرکوز کرے گی۔

سمجھوتے پر دست خط سعودی وزیر سرمایہ کاری خالد بن عبدالعزیزالفالح اور مشرقِ اوسط اور شمالی افریقا کے خطے (مینا)میں ایمازون کے نائب صدر رونالڈوموچاوار کی موجودگی میں کیے گئے ہیں۔

وزیر سرمایہ کاری خالد الفالح نے اس موقع پرکہا:’’مملکت کے وژن 2030 کے مطابق ایمازون کے ساتھ ہماری شراکت داری ایس ایم ایز کی ترقی کے مواقع پیدا کرے گی اور اس شعبے کودرپیش اہم چیلنجوں سے نمٹے گی۔نیزنئی ٹیکنالوجیز کو بروئے کار لاتے ہوئے مملکت بھر میں ملازمتوں کے نئے مواقع پیدا کرے گی‘‘۔

سعودی عرب کے وژن 2030ء کے منصوبوں میں ڈیجیٹل ڈھانچے کی ترقی کی تصریحات شامل ہیں۔اس کا مقصد معیارزندگی کو بہتر بنانا اورمملکت میں سرمایہ کاری کو راغب کرنا ہے۔

نئے طے شدہ سمجھوتے میں مقامی صلاحیتوں کی ترقی اور انھیں فعال بنانا ایک اہم مرکزی نکتہ ہے۔مینا میں ایمازون کے نائب صدررونالڈوموچاوار نے کہا:’’یہ شراکت داری مملکت اوریہاں ہمارے صارفین کے ساتھ ہمارے عزم کواجاگر کرتی ہے۔اس سے ای کامرس کے شعبے کی ترقی میں تیزی لانے کے ساتھ ساتھ مملکت میں کاروباری اداروں کو ترقی کے عظیم مواقع سے فائدہ اٹھانے میں مدد ملے گی‘‘۔

گذشتہ سال ایمازون نے سعودی عرب میں ایک بڑی توسیع کا اعلان کیا تھا۔اس میں کہا گیاتھا کہ 2021ءمیں مملکت بھر میں کم سے کم 1500 نئی ملازمتیں پیدا ہوں گی۔آن لائن پرچون فروش کمپنی کا کہنا ہے کہ وہ گیارہ نئی عمارتوں کے ساتھ سعودی عرب میں اپنے گوداموں کی صلاحیت میں 89 فی صداضافہ کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ایمازون کا کہنا ہے کہ سال کے آخر تک اس کی ذخیرہ کرنے کی صلاحیت 8 لاکھ 67 ہزارمربع فٹ سے زیادہ تک پہنچ جائے گی۔یہ رقبہ فٹ بال کے دس بڑے میدانوں کے مساوی ہے۔ایک بیان کے مطابق اس توسیع سے جغرافیائی علاقے میں بھی اضافہ ہوگااوراس میں ایمازون قریباً 58 فی صد علاقے تک رسائی کے قابل ہوگی۔

کمپنی کی گذشتہ کئی سال سے سعودی عرب میں موجودگی ہے اور اس نے 2017ء میں ویب گاہ souq.com خرید کرلی تھی۔اس کا باضابطہ آغازجون 2020ءمیں ہوا تھا جب souq.com کے بارے میں صارفین کی معلومات amazon.sa کو منتقل کردی گئیں۔ایمازون پرائم کو جنوری 2021ء میں سعودی عرب میں لانچ کیا گیا تھا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں