شمالی عراق میں فوجی آپریشن کے دوران ایک ترک فوجی ہلاک

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size

ترک وزارت دفاع کے مطابق شمالی عراق میں کرد مسلح گروپ کے خلاف فوجی آپریشن کے دوران مزید ایک ترک فوجی ہلاک ہو گیا ہے۔

اتوار کے روز ایک بیان میں ترک وزارت دفاع کے مطابق فوجی اہلکاروں کو اس وقت نشانہ بنایا گیا جب کہ وہ ایک مقام سے گزر رہے تھے۔ گزشتہ ہفتے کے دوران شمالی عراق میں ہلاک ہونے والے ترک فوجیوں کی تعداد سات ہوگئی ہے۔

ترکی نے کالعدم کردستان ورکرز پارٹی [پی کے کے] کے خلاف شمالی عراق میں مختلف فوجی آپریشن کر رکھے ہیں۔ ترکی اور اس کے مغربی اتحادی پی کے کے کو دہشت گرد تنظیم قرار دیتے ہیں۔

کردستان پارٹی نے عراق کے خودمختار علاقے کردستان میں ٹریننگ کیمپ اور فوجی اڈے قائم کر رکھے ہیں اور انہوں نے 1984 سے ترکی کے خلاف جنگ چھیڑ رکھی ہے۔

انقرہ نے شام اور عراق میں’ پی کے کے ‘کے جنگجوئوں کے خلاف متعدد آپریشن مکمل کئے ہیں جن میں سب سے حالیہ آپریشن اپریل میں شروع کیا گیا ہے۔

ترک صدر رجب طیب ایردوآن نے پیر کے روز اعلان کیا تھا کہ ترکی جلد ہی شمالی شام میں ایک نیا فوجی آپریشن شروع کرے گا جس کی مدد سے ترکی کی سرحد کے ساتھ 30 کلومیٹر کا ایک محفوظ زون بنایا جائے گا۔

مقبول خبریں اہم خبریں