شادی کی تقریب میں دُلہن کو تھپڑ مارنے والے دلہا کے خلاف مقدمہ

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
3 منٹس read

ازبکستان میں ایک دلہن کی شادی کی تقریب کے دوران دولہے کی جانب سے سر پر زوردار ضرب لگنے کے ویڈیو کلپ کےوائرل ہونے کے بعد پولیس نے مداخلت کی۔ پولیس نے اس حوالے سے جوڑے کے بیانات قلم بند کیے اور دلہا میاں کو دلہن کے خلاف اس نازیبا حرکت پر سرزنش کی۔

جب کہ کیس کی پیش رفت سے ظاہر ہوتا ہے کہ دلہن اپنے دولہے سے الگ نہیں ہوگی۔ حکام نے نئے خاندان کے سربراہ کے خلاف شادی کی تقریب میں گڑ بڑ کرنے سے متعلق ایک آرٹیکل کے تحت مقدمہ دائر کیا۔

خیال رہے کہ حال ہی میں سوشل میڈٰیا پر ایک ویڈیو کلپ وائرل ہوا تھا جس میں شادی کی تقریب کے دوران دلہے کو پاس کھڑی دلہن کو زور دار طمانچہ مارتے دیکھا جا سکتا ہے۔

ازبکستان سے تعلق رکھنے والی ایک دُلہن کو اس وقت خوفناک لمحات کا سامنا کرنا پڑا جب اس نے اپنے شوہر کے ساتھ روایتی کھیل میں اسے چت کیا تو دلہا نے یہ بدلہ شادی کی بھری محفل میں نکال دیا۔

کہانی اس وقت شروع ہوئی جب جوڑے کوشادی کے موقعے پرایک روایتی کھیل کھیلنے کے لیے مدعو کیا گیا۔ تاہم یہ نہیں بتایا گیا کہ وہ کھیل یا مقابلہ کیا تھا، لیکن یہ خیال کیا جاتا ہے کہ انہیں کوئی چیزتوڑنےکے لیے دی گئی تھی۔ اس مقابلے کا اصول یہ ہے کہ جوڑے میں سےجو کام پہلے کرتا ہے جیت جاتا ہے اور اسے انعام دیا جاتا ہے۔ اس موقعے پردُلہن مقابلہ جیت گئی اور جب دولہے کو معلوم ہوا کہ اس نے اسے شکست دی ہے تواس نے سب کے سامنے اس کے سرپر مکان دے مارا۔

مکا کھانے کے بعد دلہن لڑکھڑاگئی اور اس نے اپنا عروسی لباس فرش سے اوپر کیا اور اپنے سر پر ہاتھ رکھا۔ اسے دلہا کی طرف سے رد عمل پر شدید صدما پہنچا۔ اس واقعے کے بعد دو دوسری خواتین نے اسے اسٹیج سے باہر نکالا۔

اس دوران دولہے کے ساتھ کھڑا شخص بھی گھبراہٹ میں حیران نظر آیا۔ اس نے اپنا فون پکڑے رکھا جب پارٹی میوزک جاری تھا اور پارٹی کی لائٹس ان کے اردگرد چمک رہی تھیں۔ دولہا اسٹیج پرایسے ہی کھڑا رہا جیسے کچھ ہوا ہی نہ ہو۔ وہ خاموش ہجوم کو گھور رہا تھا جو اس جوڑے کی خوشی سے کچھ ہی لمحے پہلے جمع ہوا تھا۔

اس کے علاوہ وسطی ایشیا میں شادی کی فوٹیج سوشل میڈیا پر پھیل گئی اور ٹوئٹر پر لوگوں نے غم غصے کا اظہار کیا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں