.

جعلی مساج پارلر کی آڑ میں لوٹنے والا 5 رکنی گروہ گرفتار

مساج سنٹر پر آنے والوں کو چاقو کی نوک پر لوٹا جاتا تھا

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:

متحدہ عرب امارات کی پولیس نے چاقو کی مدد سے سے لوٹنے والے پانچ افراد کو گرفتار کر لیا ہے۔ یہ گرفتاریاں شارجہ میں کی گئی ہیں۔ یہ پانچوں لٹیرے مبینہ طور پر ایک جعلی مساج پارلر کے نام پر وارداتیں کرتے تھے۔انہوں نے اس جعلی مساج پارلر کے کارڈ بنوا رکھے تھے جو بانٹ کر لوگوں کو اس جانب متوجہ کرتے تھے۔

پولیس نے بتایا ہے کہ پانچوں باشندے ایشین ہیں۔ انہوں نے اپنے سیلون کو ایک سپا کے طور پر مشور کر رکھا تھا۔ جہاں نیچرل تھراپی سیشن کیے جاتے تھے۔ لٹنے والوں کا کہنا ہے کہ انہیں چاقو سے مسلح لوگ اوور چارج کرتے تھے اور ان سے منہ مانگی رقم زبردستی وصول کرتے تھے۔

شارجہ پولیس کے کرنل عمر الزود نے ڈائریکٹر کریمنل انویسٹی گیشن نے بتایا ہے کہ 'افسران کو ایک شخص نے اس بارے میں اطلاع دی تھی، کہ ایشین افراد رولہ کے علاقے میں مساج پارلر کے کارڈ بانٹ رہے ہیں۔ '

پولیس افسر موقع پر پہنچا تو ایک مشکوک شخص کو بھاگنے سے پہلے ہی گرفتار کر لیا۔ بعد ازاں گھر پر چھاپہ مارا تو نہ صرف جعلی مساج پارلر کے کارڈز کے ڈبے برآمد کیے بلکہ مختلف قسم کے چاقو بھی برآمد کر لیے۔

پولیس کے مطابق پورے گروہ کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ جس نے اعتراف کیا ہے کہ وہ لوگوں کو دھمکا کر لوٹتا ہے۔ پولیس نے ایک تصویر جاری کی ہے جس میں ایک مشتبہ شخص جعلی مساج پارلر کے ایک کارڈ بکس کے سامنے کھڑا ہے ۔

پولیس نے عوام کو ایسے عناصر سے ہوشیار رہنے کے لیے کہا ہے۔ نیز شہریوں کو یہ ہدایت بھی کی ہے ایسے کسی فرد یا گروہ کے بارے میں کوئی اطلاع ملے تو فوری طور پر پولیس کو اطلاع کی جائے۔

مقبول خبریں اہم خبریں