روس اور یوکرین

ماسکو زمین پر ہمارا نام ونشان مٹانا چاہتا ہے: زیلینسکی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

روسی کی جانب سے یوکرین کے دارالحکومت کیف میں پیر کے روز کیے گئے میزائل حملوں میں بڑی تعداد میں شہریوں کی ہلاکتوں کے واقعات کے بعدی یوکرین کے صدر ولادیمیر زیلنسکی نے کہا ہے کہ روس ان کے ملک کو تباہ کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ انہوں نے الزام عاید کیا کہ ماسکو زمین پران کا وجود ہی مٹانا چاہتا ہے۔

انہوں نے ٹیلیگرام ایپلی کیشن کے ذریعےکہا کہ ماسکو ’یوکرین‘ کو تباہ کرنے اور زمین سے ان کا وجود مٹانے کی کوشش کر رہا ہے‘انہوں نے مزید کہا کہ ہر لمحہ پورے ملک میں خطرے کے سائرن بج رہے ہوتے ہیں۔

زیلنسکی نے کہا کہ شہری ڈھانچے کو نشانہ بنانا دنیا کے لیے ایک پیغام ہے کہ روس کا مسئلہ صرف طاقت سے حل ہو گا۔ انہوں نے ماسکو پر الزام لگایا کہ وہ ایرانی فوجی ڈرون کو بم حملوں کے لیے استعمال کررہا ہے۔

یوکرینی صدر کے دفتر کے سربراہ کے مشیر نے مغربی ممالک سے اپنے ملک کی فوجی مدد بڑھانے کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں فضائی دفاعی نظام، میزائل لانچرز اور طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائلوں کی ضرورت ہے۔ میخائل پوڈولیاک نے کہا کہ "وسطی کیف، زپوریزیا، دنیپرو اور یوکرین کے دیگر شہروں پر جان بوجھ کر حملے اس بات کا مزید ثبوت ہیں کہ روس میدان میں نہیں لڑ سکتا، لیکن وہ عام شہریوں کو نشانہ بنا رہا ہے"۔

انہوں نے اس بات پر بھی زور دیا کہ ان کے ملک کو اب فضائی دفاعی نظام اور متعدد طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائل لانچروں کے لیے بات کرنے اور انہیں حاصل کی ضرورت ہے۔

درایں اثنا یوکرین کی فوج کے کمانڈر ویلری زالوگنی نے ٹیلی گرام پر کہا کہ روس نے 75 میزائل فائر کیے، جب کہ ان کے ملک کے فضائی دفاع نے ان میں سے 41 کو مار گرایا۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں