مشہور شیف 'سالٹ بے' ورلڈ کپ کی تقریب میں کیسے پہنچا؟ فیفا نے تحقیقات شروع کر دی

پہلی اشاعت: آخری اپ ڈیٹ:
مطالعہ موڈ چلائیں
100% Font Size
دو منٹ read

فیفا نے اس امر کی تحقیقت شروع کر دی ہیں کہ اہم شخصیٹ کا 'شیف' اور بین الاقوامی طور پر 'سالٹ بے ' کے نام سے شہرت پانے والا ترک شہری ورلڈ کپ کے ٹرافی دینے کی اختتامی تقریب میں کس طرح سٹیج تک پہنچا۔

ورلڈ کپ کے اختتام پر ٹرافی ملنے کے موقع پر بہت ہی محدود لوگوں کو اس تقریب کا حصہ بنایا جاتا ہے۔ نیز ٹرافی میچ جیتنے والے فاتحین کے علاوہ صرف موقع پر موجود کوئی حکمران ہی چھو سکتا ہے۔ لیکن ' سالٹ بی ' نہ صرف یہاں پہنچ گیا بلکہ اس نے ٹرافی بھی پکڑی اور اپنی تصاویر بنوائیں۔

' سالٹ بی' کی وجہ شہرت ان کا گوشت کے ٹکڑوں پر ایک خاص انداز میں نمک چھڑکنا اور ان کا دنیا کے کئی ممالک میں ریستورانوں کی زنجیر کھولنے میں مدد دینا ہے۔ ان کا اصل نام نصرت گوکسے ہے لیکن ان کی شہرت ' سالٹ بی ' کے نام سے زیادہ ہے۔ گو کسے کے انسٹا گرام پر پچاس ملین فالورز ہیں۔

فیفا حکام کے مطابق گوکسے کے اس طرح بغیر استحقاق کے ٹرافی پکڑ کر تصاویر بنانے کے واقعے کی تحقیقات جاری ہیں اور انتحقیقات کے بعد اندرونی طور پر کارروائی بھی کی جائے گی۔

گوکسے کو فاتح ٹیم کے کپتان لیونل میسی کو بازو سے پکڑ کر اپنی طرف متوجہ کرتے ہوئے ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے۔ اسی طرح ٹرافی پکڑے ہوئے بھی گوکسے نے تصاویر بنوائیں۔ فیفا کی آرگنائزنگ باڈی کے لیے اہم سوال یہ ہے کہ گوکسے یہاں تک کیونکر پہنچا ہے۔

گوکسے کی اس سے قبل بھی کئی فٹ بالر ز کے ساتھ تصاویر بن چکی ہیں۔ فرانس کے ایم باپے کے ساتھ بھی تصاویر بنوا چکا ہے۔

اسی ہفتے گوکسے نے اپنے انسٹا گرام اکاونٹ سے ایک ویڈیو دکھائی ہے جس میں وہ ارجنٹینا کے فاتح کپتان میسی کے ساتھ موجود ہیں۔

مقبول خبریں اہم خبریں

مقبول خبریں